عمرانکونئے صوبے کیلئے قائل کر لیا ،جنوبی پنجاب کے لوگوں کو سرپرائز کر دینگے :شاہ محمود قریشی

عمرانکونئے صوبے کیلئے قائل کر لیا ،جنوبی پنجاب کے لوگوں کو سرپرائز کر دینگے ...

  

ملتان ‘ میاں چنوں ( نیوز رپورٹر ‘ نمائندہ خصوصی ) پاکستان تحریک انصاف کے مرکزی وائس چیئرمین مخدوم شاہ محمود قریشی نے کہا ہے کہ پی ٹی آئی ملک میں ایسا نگران سیٹ اپ چاہتی ہے جو ملک میں آزادانہ اور شفاف انتخابات کروانے کی اہلیت رکھتا ہو پی ٹی آئی عدلیہ سے شفاف انتخابات کی توقع رکھتی ہے ملک میں تبدیلی لانے اور کرپٹ اشرافیہ سے نجات دلانے کے لئے شفاف انتخابات ناگزیر ہیں ان خیالات کا اظہار انہوں نے مقامی میرج (بقیہ نمبر12صفحہ12پر )

کلب میں گذشتہ روز لاہور میں 29اپریل کو ہونے والے جلسہ کے انتظامات کے سلسلے مٰں بلدیاتی ٹکٹ ہولڈرز کے مشاورتی کنونشن سے خطاب کرتے ہو ئے کیا مخدوم شاہ محمود قریشی نے مزید کہا کہ گذشتہ 70سالوں سے ملک میں جتنی بھی حکومتیں آئیں چاہے وہ جمہوری ہوں یا ڈکٹیٹر دونوں نے عوام کے لئے کچھ نہیں کیا ملک کی حالت تنزلی کی طرف جارہی ہے کسان ، محنت کش طبقہ، ٹیکسٹائل صنعت ، پاور لومز کو تباہ کیا جارہا ہے ادارے بیچے جا رہے ہیں روپے کی قدر کم ہو رہی ہے بے روزگاری کا طوفان ہے بجلی و سوئی گیس کی لوڈشیڈنگ ، عوام کو پینے کا صاف پانی میسر نہیں گڈ گورننس کی صورتحال انتہائی خراب ہے پچھلے تیس سالوں سے ملک میں پیپلز پارٹی اور (ن) لیگ کی تسلسل سے حکومتیں آرہی ہیں قائد اعظم ؒ کے بعد عمران خان ہی واحد لیڈر ہیں جنہوں نے عوام کو ایک نیاسیاسی آپشن دیا 70میں جس طرح تلوار چلتی تھی اب 2018میں بلا چلے گا انہوں نے کہا کہ میں نے عمران خان کو کہہ دیا ہے کہ اگر ملک میں تبدیلی لانی ہے تو روایتی سیاست کا خاتمہ کرنا ہو گا چور چور ہے چاہے (ن) لیگ کا ہو یا پی پی کا یا پی ٹی آئی کا الیکشن سے قبل 20ایم پی ایز کو پارٹی سے نکالنا سخت فیصلہ ہے ہمیں اس طرح کے سخت فیصلے کرنا ہوں گے انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ کے پنجاب سے پاؤں اکھڑ چکے ہیں جبکہ پی پی سندھ میں بھی کمزور ہو چکی ہے لیکن پی ٹی آئی فیڈریشن اور وفاق کی علامت ہے وفاق کی سوچ عمران خان کی سوچ ہے پی ٹی آئی نئے صوبے کی حامی ہے اس سے وفاق مضبوط ہو گا عمران خان کو قائل کرکے بتا دیا ہے کہ اگر پاکستان میں تبدیلی لانی ہے تو نیا صوبہ بھی بنانا ہو گا اگر لوگوں نے پی ٹی آئی پر اعتماد کیا تو تحریک انصاف جنوبی پنجاب کے لوگوں کو علیحدہ تشخص اور صوبہ دے گی انہوں نے کہا کہ پی پی اور (ن) لیگ اقتدار میں رہتے ہو ئے نئے صوبہ کے لئے کچھ نہ کرسکی آئندہ کیا کریں گے انتظامی طور پر نئے صوبے کا قیام وفاق کو مضبوط کرے گا انہوں نے کہا کہ (ن) لیگ سمندر پار پاکستانیون کو ووٹ کا حق دینے کے خلاف ہے لیکن پی ٹی آئی ان کو ووٹ کا حق دلائے گی انہوں نے کہا کہ 29اپریل کا لاہور کا جلسہ ملک کی آئندہ سیاست کا رخ متعین کرے گا اور عمران خان اس جلسہ میں آئند ہ کے سیاسی لائحہ عمل اور الیکشن منشور کا اعلان کریں گے ملتان سے جنو بی پنجاب کا سب سے بڑا قافلہ لاہور کے لئے روانہ ہو گا کنونشن میں ملک عامر ڈوگر،مخدوم زین حسین قر یشی،ابراھیم خان، ملک غلام عباس کھاکھی خطاب کر رہے ہیں جبکہ جا وید اختر انصاری ،مخدوم شیر شاہ،مخدوم شعیب اکمل ہاشمی، راناعبد الجبار، اعجاز جنجوعہ،ظہیر خان بادوزئی، ڈاکٹر اختر ملک، وسیم خان ،معین قریشی ، شاھدمحمو د خان،مونی شاہ،میاں جمیل ، عو ن عباس بپی، سلمان قریشی ،احمد حسین دہیر،سلمان نعیم،ملک عاصم،میاں طارق عبد اللہ،حافظ اللہ دتہ کاشف،عباس علی انصاری ،راناجمیل، رانا افسر، اطہر خان گورچانی ، ملک سلیم لابر خالد جاوید ،ندیم قریشی ،سلمان صدیقی ، شہربانو،سبین گل ،زہین کنول،سعدیہ بھٹہ ،چوہدری مقبول ارائیں۔ اسلم سعید قریشی ،عاصم اعجاز ،واجد شو کت،رب نواز،ملک عباس،ملک نذیر ،چوہدری یاسین،ودیگر نے بھی خطاب کیا ۔دریں اثنا ووٹ کو عزت دو کا بیانیہ لے کر 2018کے الیکشن میں حصہ لینے والی ن لیگ نے 2013کے الیکشن میں ووٹ کے تقدس کو پامال کیا جب بائیس سیاسی جماعتیں کہ رہیں تھیں کہ الیکشن میں دھاندلی ہوئی ہے مسلم لیگ ن کا مستقبل میاں نواز شریف کے مستقبل سے جڑا ہوا ہے میاں نواز شریف کو نیب عدالت سے سزا کے واضح امکانات ہیں انہیں صفائی کا بھرپور موقعہ دیا گیا لیکن وہ اپنی بے گناہی ثابت کرنے میں ناکام رہے یہ باتیں پاکستان تحریک انصاف کے وائس چیئرمین شاہ محمود قریشی نے تحریک انصاف ضلع کے صدر پیر ظہور حسنین قریشی کی رہائش گاہ پر 23ن لیگی چیئرمینز وائس چیرمینز سابقہ ناظمین اور کونسلرز کی تحریک انصاف میں شمولیت کے موقعہ پر بڑے عوامی اجتماع سے خطاب کرتے ہوئے کیں انہوں نے مزید کہا کہ پنجاب کی آبادی گیارہ کروڑ ہے جوکہ بہت سے ممالک سے زیادہ ہے دنیا میں عوام کی سہولت کے لئے اختیارات کی تقسیم کا دور آگیا ہے جو کہ وقت کی اہم ضرورت ہے پاکستان تحریک انصاف جنوبی پنجاب کے لوگوں کو سرپرائز دے گی اور جنوبی پنجاب کو الگ صوبہ بنا ئے گی جنوبی پنجاب صوبہ بنانے میں سب بڑی رکاوٹ مسلم لیگ ن اور پیپلز پارٹی ہیں اگر یہ دونوں جماعتیں مخلص ہیں تو دو ایم پی ایز نصراللہ دریشک اور مخدوم ہاشم نے صوبائی اسمبلی میں الگ صوبے کی قرارداد جمع کروا دی ہے دونوں جماعتیں اس قرارداد کو منظور کریں میں یقین دلاتا ہوں کہ تحریک انصاف صوبائی اسمبلی اور قومی اسمبلی میں اس قرار داد کو منظور کروانے میں اپنا کردار ادا کرے گی ،سینٹ الیکشن میں ووٹوں کی خریدو فروخت کے حوالے سے ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہ تحریک انصاف نے اپنے ووٹ فروخت کرنے والے بیس ایم پی ایز کو پارٹی سے نکالتے ہوئے شوکاز نوٹس جاری کئے سینٹ الیکشن میں ووٹ کی خریدو فروخت میں ملوث تمام لوگ برابر کے شریک ہے ان کو سزا ملنی چاہیئے ،ا اس موقعہ پر ن لیگ چھوڑ کر پی ٹی آئی میں شامل ہونے والے سابق ناظمین چوہدری محمد سلیم ،ماسٹر محمد شریف ،ملک خاور ،چیئرمین یونین کونسل چوہدری راشد محمود ،مہر حسن سہو ،وائس چیئرمین مبدین شاہ ،سابق امیدوار چیئرمینیونین کونسلز وسیم شہزاد ،چوہدری محمد اقبال ،چوہدری محمد سرور ،چوہدری علی احمد ،لالہ لطیف کمبوہ ،چوہدری پرویز ماسٹر حسن طارق مہر خالد محمود لک ،مہر عمر ہراج ،ڈاکٹر شہباز،سمیت علاقہ معززین چوہدری زین نمبردار ،یسین نمبر دار ،فیاض احمد ظفر ،چوہدری عبدالقیوم سمیت کونسلرز کی بڑی تعداد نے تحریک انصاف میں شمولیت اختیار کی ،تقریب سے ضلعی صدر پاکستان تحریک انصاف خانیوال پیر ظہور حسنین قریشی نے بھی خطاب کیا تقریب میں پی پی 207سے پاکستان تحریک انصاف کے امیدوار صوبائی اسمبلی پیر علی عباس شاہ ،اور پی پی208سے امیدوار صوبائی اسمبلی چوہدری جمشید شوکت پاکستان تحریک انصاف کے سابق ٹکٹ ہولڈر چوہدری مقصود عالم ،ایاز محمود گیلانی ،ودیگر عہدیدار بھی موجود تھے ،قبل ازیں چیئرمین قائمہ کمیٹی اطلاعات و نشریات و قومی ورثہ پیر محمد اسلم بودلہ کی والدہ کی وفات پر فاتحہ خوانی کے بعد شاہ محمود قریش نے کہا کہ حکومت کی ناقص منصوبہ بندی کی وجہ سے ملک میں پانی کی قلت پیدا ہوئی ہے اگر ادارے اپنا کام بہتر انداز میں نہ کریں تو کسی نہ کسی کو مداخلت کرنا پڑتی ہے

شاہ محمود

مزید :

ملتان صفحہ آخر -