بونیر میں پرائیویٹ ایجوکیشن کے زیر اہتمام سواڑی میں مظاہرہ

بونیر میں پرائیویٹ ایجوکیشن کے زیر اہتمام سواڑی میں مظاہرہ

  

بونیر(ڈسٹرکٹ رپورٹر)پرائیویٹ ایجوکیشن نیٹ ورک کے زیر اہتمام بونیر کے مرکزی بازار سواڑی میں زبردست احتجاجی مظاہر ہ ۔مظاہرین نے شانگلہ بونیر روڈ کو ہر قسم کے ٹریفک کے لئے بند کردیا ۔صوبائی حکومت کے خلاف زبردست نعرہ بازی ۔کل دوبارہ سکول بند رکھنے کا اعلان کیا ۔مظاہرین سے خطاب کرتے ہوئے پن کے ضلعی صدر محمد حلیم باچا ۔نائب صدر سید زیب ۔عالم خان ۔محمد شاہ ۔ناصرعلی ۔عمادالدین ۔سید جانااوردیگر نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ موجودہ صوبائی حکومت نے ریگولرٹی اٹھارٹی بل کے نام پر پرائیویٹ تعلیمی اداروں کو اپنے کنٹرول میں لاکر اسے تباہ کرنا چاہتے ہیں ۔اگر صوبائی حکومت تعلیم کے بارے میں مخلص ہے تو وہ سرکاری اداروں کو ٹھیک کرے ۔حکومت پرائیویٹ تعلیمی اداروں کے ساتھ تعاون کرنے کی بجائے اسے دیوار کے ساتھ لگارہی ہیں ۔انہوں نے کہا کہ بونیر میں ساٹھ ہزار بچے پرائیویٹ تعلیمی اداروں میں معیاری تعلیم حاصل کررہے ہیں اور ساتھ ساتھ سات ہزار افراد کو باعزت روزگاردے رہی ہیں ۔مگر اسکے باوجود صوبائی حکومت اسے اپنے کنٹرول میں لانا چاہتے ہیں ۔جو ہمیں ہر گز قبول نہیں ۔مقررین نے کہا کہ ملک میں ڈگری ہولڈرز جوان بے روزگار ہیں ۔مگر حکومت ان کو روزگار نہیں دے سکتی ۔پرائیویٹ تعلیمی اداروں نے ڈگری ہولڈرز نوجوانوں روزگار مہیا کی ہے ۔انہوں نے کہا کہ آج پورے صوبہ خیبر پختون خواہ میں تمام تعلیمی ادارے دو روز کے لئے بند ہیں جسکی تمام تر ذمہ داری حکومت پر ہیں ۔انہوں نے کہاکہ ہم اس ظالمانہ فیصلہ کے خلاف کسی بھی حد تک جاسکتے ہیں ۔مگر یہ ظالمانہ فیصلہ قبول نہیں کریں گے ۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -