45 سالہ سکول ٹیچر نے 19 سالہ طالبہ کو اغوا کرکے اس سے دوسری شادی رچالی، لیکن یہ کیا کیوں؟ وجہ جان کر آپ کو اور بھی زیادہ افسوس ہوگا

45 سالہ سکول ٹیچر نے 19 سالہ طالبہ کو اغوا کرکے اس سے دوسری شادی رچالی، لیکن یہ ...
45 سالہ سکول ٹیچر نے 19 سالہ طالبہ کو اغوا کرکے اس سے دوسری شادی رچالی، لیکن یہ کیا کیوں؟ وجہ جان کر آپ کو اور بھی زیادہ افسوس ہوگا

  

پونے(نیوز ڈیسک)کیسا زمانہ آ گیا ہے! ایک وقت تھا کہ معاشرے میں استاد کو شرافت کی علامت سمجھا جاتا تھا اور ہر کوئی اس کی عزت کرتا تھا لیکن آج یہ دور ہے کہ استاد بھی جنسی جرائم میں ملوث نظر آتے ہیں۔ اسی طرح کا ایک شرمناک واقعہ بھارتی شہر پونے میں پیش آیا ہے جہاں ایک استاد نے بیٹاپیدا کرنے کے لئے ایک نوجوان لڑکی کو اغواءکر کے زبردستی اپنی بیوی بنا لیا۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق اس شخص کی عمر 45 سال ہے اور وہ پہلے سے شادی شدہ اور 14 سالہ بیٹی کا باپ ہے۔ اسے بیٹے کی خواہش تھی اور وہ اس خواہش کی تکمیل کے لئے دوسری شادی کا خواہاں تھا۔ اس مقصد کے لئے اس نے ایک غریب خاندان کو پانچ لاکھ روپے کا لالچ دے کر ان کی 19 سالہ لڑکی سے شادی کی بات طے کی لیکن چونکہ لڑکی شادی کے لئے تیارنہیں تھی تو اسے بزور طاقت اغواءکر کے اپنے ساتھ لے گیا۔ لڑکی نے کسی طور ایک موبائل فون حاصل کیا اور اپنی حالت زار سے پولیس کو آگاہ کیا جس کے بعد شیطان صفت استاد کو گرفتار کر لیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ لڑکی کے اغواءاور شادی کے نام پر اس کی عصمت دری کرنے کے جرم میں گرفتار ملزم کے علاوہ اس کی بیوی اور لڑکی کے والدین بھی ملوث تھے۔ پولیس نے کل 14 افراد کے خلاف پرچہ کاٹا ہے جن میں سے کچھ تاحال مفرور ہیں اور ان کی تلاش جاری ہے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -