’مجھے میرے اپنے ہی باپ نے جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا‘ معروف گلوکار نے ایسا انکشاف کردیا کہ ہر کسی کو افسردہ کردیا

’مجھے میرے اپنے ہی باپ نے جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا‘ معروف گلوکار نے ایسا ...
’مجھے میرے اپنے ہی باپ نے جنسی ہراسگی کا نشانہ بنایا‘ معروف گلوکار نے ایسا انکشاف کردیا کہ ہر کسی کو افسردہ کردیا

  

اوٹاوا(مانیٹرنگ ڈیسک) ہالی ووڈ کے پروڈیوسر ہاروے ونسٹن پر درجنوں خواتین کی طرف سے جنسی زیادتی کے الزامات سامنے آنے کے بعد سے دنیا بھر کی معروف خواتین اپنے ساتھ ہونے والے جنسی استحصال کی کہانیاں بیان کرتی آ رہی ہیں اور اب کینیڈا کی معروف گلوکارہ شانیا توین نے اس حوالے سے ایسا انکشاف کر دیا ہے کہ سن کر ہر کوئی افسردہ ہو جائے۔ دی گارڈین کو انٹرویو دیتے ہوئے 52سالہ شانیا نے کہا ہے کہ وہ بھی بچپن میں جنسی و جسمانی استحصال کا شکار ہو چکی ہے اور اس کے ساتھ یہ سلوک کرنے والا کوئی اور نہیں بلکہ اس کا سوتیلا باپ تھا۔

شانیا کا کہنا تھا کہ ”میں اس کی تفصیل میں نہیں جانا چاہتی تاہم میں اتنا بتا سکتی ہوں کہ میرے سوتیلے باپ جیری توین نے اس وقت میرا جنسی و جسمانی استحصال شروع کیا جب میری عمر صرف10سال تھی۔ میں اپنے حقیقی باپ کو نہیں جانتی، جب سے میں نے ہوش سنبھالی، جیری توین ہی میرا باپ تھا۔ اس کے استحصال پر میں اس لیے خاموش رہی کہ اگر میں پولیس کو اطلاع دیتی تو ہمارا گھر بکھر جاتا اور ہم سب الگ الگ ہو جاتے اور یہ میں کبھی بھی برداشت نہیں کرپاتی۔ اسی خوف سے میں نے کبھی کسی کو کچھ نہیں بتایا تھا۔“واضح رہے کہ شانیا کا والد جیری اور والدہ شیرون 1987ءمیں ایک کارحادثے میں جاں بحق ہو گئے تھے۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -