’جو خواتین حمل کے دوران یہ چیز پیتی ہیں، ان کے بچے موٹے ہوتے ہیں‘ سائنسدانوں نے وارننگ دے دی، جان کر پاکستانی خواتین پریشان ہوجائیں گی

’جو خواتین حمل کے دوران یہ چیز پیتی ہیں، ان کے بچے موٹے ہوتے ہیں‘ سائنسدانوں ...
’جو خواتین حمل کے دوران یہ چیز پیتی ہیں، ان کے بچے موٹے ہوتے ہیں‘ سائنسدانوں نے وارننگ دے دی، جان کر پاکستانی خواتین پریشان ہوجائیں گی

  

اوسلو (مانیٹرنگ ڈیسک) چائے اور کافی ہمارے ملک کے پسندیدہ مشروب ہیں لیکن اب سائنسدانوں نے حاملہ خواتین کے لیے کافی کا ایک ایسا نقصان بتا دیا ہے کہ سن کر خواتین پریشان ہو جائیں گی۔ میل آن لائن کے مطابق ناروے کے سائنسدانوں نے اپنی تحقیق کے نتائج میں بتایا ہے کہ جو خواتین دوران حمل کافی پیتی ہیں ان کے ہاں پیدا ہونے والے بچے موٹاپے کا شکار ہوتے ہیں اور پیدائش کے وقت ہی ان کا وزن نارمل بچوں کی نسبت بہت زیادہ ہوتا ہے۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

سائنسدانوں نے اس تحقیق میں 2002ءسے 2008کے دوران 51ہزار حاملہ خواتین اور ان کے ہاں پیدا ہونے والے بچوں پر تجربات کیے۔ اس میں انہوں نے دوران حمل ماﺅں کے کیفین والے مشروبات چائے، کافی وغیرہ پینے کی عادت، پیدائش کے وقت ان کے بچوں کا وزن اور اگلے 10سال کے دوران ان میں موٹاپے کی شرح کا تجزیہ کرکے نتائج مرتب کیے، جن کے مطابق جو مائیں حمل کے دوران روزانہ دو کپ کافی پیتی تھیں ان کے بچوں کا وزن کافی نہ پینے والی ماﺅں کے بچوں کی نسبت 30سے 66فیصد زیادہ تھا اوراس کے بعد بھی وہ اسی شرح سے زیادہ موٹاپے کا شکار تھے۔ تحقیقاتی ٹیم کی سربراہ پیروفیسر ہیزل انسکیپ کا کہنا تھا کہ ”روزانہ دو کپ کافی پینے والی ماﺅں کے بچوں کا وزن تین سے 12ماہ کی عمر میں دوسروں کی نسبت3اونس جبکہ 8سال کی عمر میں ایک پاﺅنڈ تک زیادہ تھا۔“

مزید :

ڈیلی بائیٹس -تعلیم و صحت -