’بھارتی مرد بہت زیادہ خواتین کا ریپ کرتے ہیں کیونکہ وہ ۔۔۔‘ بھارتی سیاستدان نے ایسی وجہ بتادی کہ آپ بھی کہیں گے ٹھیک کہہ رہا ہے

’بھارتی مرد بہت زیادہ خواتین کا ریپ کرتے ہیں کیونکہ وہ ۔۔۔‘ بھارتی سیاستدان ...
’بھارتی مرد بہت زیادہ خواتین کا ریپ کرتے ہیں کیونکہ وہ ۔۔۔‘ بھارتی سیاستدان نے ایسی وجہ بتادی کہ آپ بھی کہیں گے ٹھیک کہہ رہا ہے

  

نئی دلی(نیوز ڈیسک)بھارت میں جنسی جرائم کا ایسا طوفان برپا ہے کہ دنیا بھر میں اس کا شور سنائی دے رہا ہے مگر بھارتی حکومت ہے کہ ایک کے بعد ایک احمقانہ بات کرکے اپنی ذمہ داری سے پہلو بچانے کی کوشش کررہی ہے۔ کبھی کوئی وزیر جرائم کے اعدادوشمار کو مبالغہ آرائی قرار دے دیتا ہے تو کبھی متاثرہ لڑکیوں کو ہی جنسی جرائم کا ذمہ دار قرار دے دیا جاتا ہے۔ اب ریاست مدھیا پردیش کے وزیر داخلہ بھوپندرا سنگھ نے جنسی جرائم کی ساری ذمہ داری فحش فلموں پر ڈال دی ہے۔

یوٹیوب چینل سبسکرائب کرنے کیلئے یہاں کلک کریں

ٹائمز آف انڈیا کے مطابق بھوپندرا سنگھ نے گزشتہ روز مرکزی حکومت کو ایک خط لکھ کر بتایا ہے کہ جنسی جرائم کی وجہ فحش ویب سائٹیں ہیں لہٰذا فوری طور پر ان پر پابندی لگادی جائے۔ انہوں نے لکھا کہ مدھیا پردیش حکومت نے 25 فحش ویب سائٹوں پر پابندی لگائی ہے لیکن یہ کافی نہیں ہے۔ صحافیوں سے بات کرتے ہوئے بھی وزیر کا کہنا تھا کہ فحش ویب سائٹوں کی وجہ سے کم عمر لڑکے لڑکیاں بھی جنسی جرائم کی جانب راغب ہورہے ہیں۔ انہوں نے صحافیوں کو بتایا کہ بچوں کے ساتھ جنسی جرائم میں اضافے کی وجہ فحش ویب سائٹیں ہی ہیں۔

وزیر موصوف کے اس بیان پر بھارتی سوشل میڈیا میں خاصی تنقید کی جارہی ہے۔ ان کے ناقدین کا کہنا ہے کہ فحش مواد پر قابو پانا ضروری ہے لیکن یہ بات بھی درست نہیں کہ حکومت اسے اپنے فرائض سے غفلت کا بہانہ بنا لے۔ لاقانونیت، جنسی مجرموں کو کھلی چھوٹ، خواتین کے تحفظ کے لئے اقدامات کا نہ ہونا اور دیگر ایسی باتوں پر پردہ ڈال کر سارا ملبہ فحش ویب سائٹوں پر ڈال دینا محض ایک ڈرامے کے سوا کچھ نہیں۔ سوشل میڈیا صارفین مطالبہ کرتے نظر آرہے ہیں کہ وزیر موصوف فحش ویب سائٹوں کو بند کرنے سے فارغ ہوجائیں تو اصل وجوہات پر بھی کچھ توجہ دیں۔

مزید :

ڈیلی بائیٹس -بین الاقوامی -