چیف جسٹس پاکستان کی لاہور ہائیکورٹ کی سلیکشن کمیٹی کوسول جج کے عہدہ کے لئے نابینا امیدوار کا دوبارہ انٹرویو کرنے کی ہدایت

چیف جسٹس پاکستان کی لاہور ہائیکورٹ کی سلیکشن کمیٹی کوسول جج کے عہدہ کے لئے ...
چیف جسٹس پاکستان کی لاہور ہائیکورٹ کی سلیکشن کمیٹی کوسول جج کے عہدہ کے لئے نابینا امیدوار کا دوبارہ انٹرویو کرنے کی ہدایت

  

لاہور(نامہ نگارخصوصی) چیف جسٹس پاکستان مسٹر جسٹس میاں ثاقب نثارنے لاہور ہائیکورٹ کی سلیکشن کمیٹی کوسول جج کے عہدہ کے لئے نابینا امیدوار یوسف سلیم کا دوبارہ انٹرویو کرنے کی ہدایت کر دی ۔

چیف جسٹس میاں ثاقب نثار نے سول ججوں کی بھرتی کے لئے بصارت سے محروم امیدوار یوسف سلیم کی اپیل پر نوٹس لے کر یہ حکم جاری کیا ۔ یوسف سلیم سول ججوں کے لئے ہونے والے تحریری امتحان کو پاس کر چکے تھے مگر انہیں انٹرویو میں فیل کر دیا گیا،یوسف سلیم نے چیف جسٹس پاکستان سے اپیل کرتے ہوئے کہا کہ انٹرویو میں ان سے بصارت سے متعلق ہی سوالات کئے گئے ان کی پیشہ وارانہ اہلیت کو درست طرح سے نہیں جانچا گیا،چیف جسٹس یوسف سلیم کی اپیل کا نوٹس لیتے ہوئے لاہور ہائیکورٹ کی سلیکشن کمیٹی کو دوبارہ انٹرویو کرنے کی ہدایت کی ہے، ہائیکورٹ کے ججوںکی سلیکشن کمیٹی نے 6 ہزار کے لگ بھگ امیدواروں میں سے یوسف سلیم سمیت کل 21 امیدواروں کوتحریری امتحان میں پاس کرتے ہوئے انٹرویو کے اہل قرار دیا تھا،سلیکشن کمیٹی نے 21میں سے 16افراد کو انٹرویو میں پاس کردیا تھا جبکہ یوسف سلیم سمیت 5امیدواروں کوانٹرویو میں فیل کر دیا تھا۔

مزید :

علاقائی -پنجاب -لاہور -