فیسوں میں کمی، عمل بھی کرائیں!

فیسوں میں کمی، عمل بھی کرائیں!

  

پنجاب حکومت نے تعلیمی اداروں کی فیسوں میں 20فیصد کمی کے حوالے سے باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری کر دیا ہے، اس کے مطابق تمام نجی تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کو پابند کیا گیا کہ وہ ماہانہ فیسوں میں 20فیصد کمی کریں اور گرمیوں کی چھٹیوں کے پیریڈ کی فیسیں یکمشت لینے کی بجائے ایک ایک ماہ کے حساب سے لیں کہ کورونا کی وجہ سے والدین پر پہلے ہی بوجھ ہے اور چھٹیاں بھی معمول سے ہٹ کر ہوئی ہیں، صوبائی حکومت کا یہ فیصلہ وفاقی حکومت کے فیصلوں کی روشنی میں ہوا اور باقاعدہ نوٹیفکیشن جاری ہوا ہے۔ تاہم نجی سکول اس پر عمل سے گریزاں ہیں۔ حکومت نے فیسوں کی وصولی اور اساتذہ کے علاوہ دوسرے عملے کو تنخواہوں کی ادائیگی میں سہولت کے لئے نجی تعلیمی اداروں کے دفاتر کو لاک ڈاؤن سے مستثنیٰ قرار دے دیا ہے اور یہ دفاتر کھل بھی گئے، تاہم والدین نے شکائت کی ہے کہ وہ فیس دینے گئے تو تعلیمی اداروں کی انتظامیہ کے دفاتر والے تین ماہ کی فیس بلا کمی پوری مانگ رہے ہیں۔ صرف اِکا دُکا بڑے نجی تعلیمی ادارے ایسے ہیں، جنہوں نے وفاقی حکومت کے فیصلے کے بعد ہی طلباء و طالبات کے والدین کو گھروں پر فیسوں کے نوٹس بھجوا دیئے تھے۔ ان کے مطابق ایک ماہ کی فیس 20فیصد کمی سے جمع کرانے کے لئے کہا گیا تھا، تاہم اکثریت اس ہدایت یا حکم پر عمل سے گریز پا ہے اور والدین پریشان ہیں، ان کا مطالبہ ہے کہ اگر حکومت نے فیصلہ کرکے حکم یا ہدایت بھی جاری کر دی ہے تو پھر اس پر عمل بھی کرایا جائے کہ صرف اعلان ہی کافی نہیں،ایک یہ شکائت بھی موصول ہوئی ہے کہ اکثر نجی تعلیمی اداروں نے اساتذہ اور دیگر عملے کی چھانٹی بھی کر دی ہے۔ اب یہ فرض بھی حکومت پنجاب پر عائد ہوتا ہے کہ وہ اپنے حکم / ہدایت پر عمل کرائے، تاکہ عملہ بے روزگاری سے اور والدین پریشانی سے بچیں۔

مزید :

رائے -اداریہ -