انسداد سمگلنگ آرڈیننس نافذ، آٹا اور چینی سمیت دیگر اشیائے ضروریہ پر اطلاق ہوگا

  انسداد سمگلنگ آرڈیننس نافذ، آٹا اور چینی سمیت دیگر اشیائے ضروریہ پر اطلاق ...

  

اسلام آباد(سٹاف رپورٹر)وفاقی کابینہ نے سرکولیشن سمری کے ذریعے انسداد سمگلنگ آرڈیننس کی منظوری دے دی،آرڈیننس کا اطلاق غیرملکی کرنسی، سونے، چاندی،آٹا،چینی اور دیگر اشیائے ضروریہ پر ہوگا،سمگلنگ میں ملوث افراد کو 14 سال تک کی سزا ہو سکے گی۔ تفصیلات کے مطابق کورونا صورتحال کے پیش نظرسمگلنگ کی روک تھام سے متعلق آرڈیننس میں غیر منظورشدہ راستوں سے غیرملکی کرنسی، گندم،آٹا، چینی اور چاول سمیت دیگر اشیا کی ترسیل سمگلنگ قرار دی گئی۔کسٹمز ایکٹ کے تحت سرکاری منظورشدہ راستوں سے ہی اشیا کی ترسیل قانونی طور پر جائز ہو گی جبکہ سمگلنگ کرنے والے کو 14 سال قید کی سزا ہوسکے گی،آرڈیننس کا اطلاق ملک بھر میں فوری طور پر ہوگا۔کسٹمز، ایف بی آر اور قانون نافذ کرنے والے ادارے کارروائی کے مجاز ہونگے۔متعلقہ ادارے کارروائی نہ کریں تو سیکرٹری قانون کو کارروائی کا اختیار ہوگا،آرڈیننس کے مطابق خصوصی عدالتیں ملوث افراد کیخلاف سمری ٹرائل کریں گی۔آرڈیننس کے تحت سمگلرز کے سہولت کاروں کیخلاف بھی کارروائی ہوسکے گی۔سمگلرز کو وارنٹ کے بغیر بھی گرفتار کیا جا سکے گا۔سمگلنگ کی اطلاع دینے والے کو ریکوری کا 10 فیصد انعام دیا جائے گا جبکہ سمگلنگ کا پکڑا گیا مال بحق سرکار ضبط کر لیا جائے گا۔

سمگلنگ آرڈیننس

مزید :

صفحہ اول -