فراڈ کیس،ملزم حفیظ10 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

فراڈ کیس،ملزم حفیظ10 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کے حوالے

  

لاہور (نامہ نگار خصوصی)احتساب عدالت نے فضائیہ ہاؤسنگ سوسائٹی فراڈ کیس میں گرفتار ملزم محمد حفیظ کو 10 روزہ جسمانی ریمانڈ پر نیب کی تحویل میں دیتے ہوئے اسے دوبارہ 2 مئی کو عدالت میں پیش کرنے کا حکم دے دیا،ملزم کو گرفتاری کے بعد جسمانی ریمانڈ کے حصول کیلئے ڈیوٹی جج امجد نذیر چودھری کی عدالت پیش کیا گیا۔نیب کے سپیشل پراسکیوٹر عاصم ممتاز نے عدالت میں موقف اختیار کیا کہ محمد حفیظ پر سادہ لوح شہریوں سے فراڈ کرنے کا الزام ہے، ملزم محمد حفیظ فضائیہ ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک سلیم حنیف کا بھائی ہے، ملزمان نے آپس کی ملی بھگت سے پاک فضائیہ ہاؤسنگ سوسائٹی کے نام پر عوام الناس کو لوٹااور ایک ہزار 16 افراد متاثر ہوئے، نسوسائٹی انتظامیہ پر کم و بیش 2 ارب روپے کی کرپشن کا الزام ہے، معاہدہ کیمطابق فضائیہ ہاؤسنگ سوسائٹی کو 350 ایکڑ زمین فراہم کرنا تھی، سوسائٹی کے نام سے متعدد لوگوں کو فارم بھی فروخت کیے گئے، نگرفتار ملزم محمد حفیظ نے خود کو میسرز پرل ڈی گلف نامی کمپنی کا مالک ظاہر کر کے فراڈ کیا، پرل ڈی گلف کمپنی کا فضائیہ ہاؤسنگ سوسائٹی کیساتھ ڈویلپمنٹ کا معاہدہ کیا گیا تھا، ملزم نے معاہدہ کی پاسداری نہیں کی اور تعمیراتی کام مکمل نہ کروائے، ملزم سے تفتیش کیلئے 14 روزہ جسمانی ریمانڈ دیا جائے، یاد رہے نیب نے فضائیہ ہاؤسنگ سوسائٹی کے مالک ملزم سلیم حنیف کو پہلے ہی گرفتار کر رکھا ہے

ملزم حفیظ

مزید :

صفحہ آخر -