کورونا وباء سے بچاؤ کا واحد حل سماجی فاصلہ، اجتماع مصیبت کو دعوت دینے کے مترادف: ڈاکٹرز

  کورونا وباء سے بچاؤ کا واحد حل سماجی فاصلہ، اجتماع مصیبت کو دعوت دینے کے ...

  

لاہور(جنرل رپورٹر)ڈاکٹرز کی مختلف تنظیموں نے کہا ہے کہ پی ایم اے، پاکستان اسلامک میڈیکل ایسوسی ایشن، فیملی فزیشنز اور میڈیکل برادری کی طرف سے کورونا وائرس کے حوالے سے موجودہ صورتحال میں آگے بڑھ کر اپنی ذمہ داری ادا کرنا ہے۔دنیا بھر میں کورونا کی تباہی اور ترقی یافتہ امیر ترین ممالک کی بے بسی نے اس بیماری سے لڑنے کا ایک ہی راستہ سمجھایا ہے کہ" آئسولیشن، آئسولیشن اور صرف آئسولیشن "۔ حکومت وقت کی طرف سے لاک ڈاؤن کے حوالے سے کچھ نرمی کے تاثر نے گزشتہ کچھ دنوں سے شہروں اور بازاروں میں بے ہنگم رش اور حکومتی ایس او پیزکی کھلم کھلا خلاف ورزی پر ہمیں بہت تشویش ہے۔اس امر کا اظہار انہوں نے گزشتہ روز اپنی مشترکہ پریس کانفرنس میں کیا۔اس موقع پر گفتگو کرتے ہوئے پروفیسر اشرف نظامی صدر پی ایم اے لاہور، ڈاکٹر اظہار احمد چوہدری سابقہ صدر پی ایم اے پنجاب، پروفیسر شاہد ملک جنرل سیکریٹری پی ایم اے،پروفیسر افضل فاروق سینئر صدر پی آئی ایم اے، ڈاکٹر واجد علی فنانس سیکریٹری پی ایم اے، ڈاکٹر طارق محمود میاں صدر پی اے ایف پی،ڈاکٹر احمد نعیم جوائنٹ سیکریٹری پی ایم اے،ڈاکٹر سعید احمدسینئر وائس صدر پی اے ایف پی، ڈاکٹر سلمان کاظمی جنرل سیکریٹری وائی ڈی اے پاکستان، ڈاکٹر طلحہ شیروانی سابقہ جوائنٹ سیکریٹری پی ایم اے سنٹر نے کہا کہہمیں ڈر ہے کہ ماہ رمضان میں تراویح اور باجماعت نماز کی ادائیگی کی اجازت ایک بہت بڑی مصیبت کو دعوت دینے کے مترادف ہے۔میڈیکل پروفیشن اس خطرے کو شدت سے محسوس کر تے ہوئے حکومت وقت کو خبردار کرنا چاہتا ہے کہ وہ حالات کی سنگینی کو سمجھتے ہوئے فوری طور پر لاک ڈاؤن پر سختی سے عملدرآمد کرائے۔ عوام کی موجودہ روش کو دیکھتے ہوئے فوری طور پر مساجد میں باجماعت تراویح اور نماز کی ادائیگی کی اجازت پر نظر ثانی کرے۔ ہم علماء کرام اور اکابرین دین سے بھی دست بدستہ درخواست کرتے ہیں کہ کہ وہ حالات کی سنگینی کے پیش نظر اپنا قومی فریضہ پورا کریں۔ مساجد میں کسی بھی قسم کے اجتماع سے گریز کریں۔ یہ انسانی زندگی کا معاملہ ہے اور میڈیکل پروفیشن اُن سے قوم کی خاطر اپیل کر رہا ہے۔ ہمیں امید ہے وہ اس پر ضرور غور کر کے مثبت فیصلہ کریں گے۔ اس سے اُن کی عزت اور تکریم میں مزید اضافہ ہو گا۔ خواہش ہے ہم وباء سے بچاؤ کیلئے احتیاط کریں، جبکہ بارگاہ الٰہی میں دعا ہے کہ وہ پاکستان پر رحم فرمائے، ہماری خطاؤں کو معاف کرے اور ہم بحیثیت قوم بہترین اجتماعی فیصلوں سے اپنے لوگوں کو اس بیماری سے محفوظ رکھ سکیں۔

ڈاکٹرز

مزید :

صفحہ آخر -