پوری قوم کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے پیچھے لگا دیا گیا، ایمل ولی

  پوری قوم کو بے نظیر انکم سپورٹ پروگرام کے پیچھے لگا دیا گیا، ایمل ولی

  

چارسدہ(بیورورپورٹ)اے این پی کے صوبائی صدر ایمل ولی خان نے کہا ہے کہ پوری قوم کو بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے پیچھے لگا دیا گیا ہے۔بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کوبدنیتی پر مبنی احساس پروگرام کا نام دیکرغرباء اور کمزور شہریوں کی ہمدردی حاصل کرنے کی ناکام کوشش کی جارہی ہے۔ولی باغ چارسدہ سے جاری کردہ اپنے بیان میں ایمل ولی خان نے کہا کہ بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کا نام تبدیل کرکے احساس پروگرام شروع کیا گیا ہے اور پوری قوم کو یہ باور کرایا جارہا ہے کہ قوم کا روشن مستقبل احساس پروگرام کی کامیابی میں مضمر ہے۔چند ہزار روپے جس طریقے سے دیے جارہے ہیں اْس سے نہ صرف غریب شہریوں کی عزت نفس کو مجروح کیا جارہا ہے بلکہ اس طریقہ کار سے کورونا کے پھیلنے کا خدشہ بھی ہے۔ ایمل ولی خان نے کہا کہ ریاست شہریوں کو حقوق دینے کی بجائے باعزت شہریوں کو خیرات کے پیچھے لگا رہا ہے۔ ایمل ولی خان نے مزید کہا کہ قوم کو یہ بھی بتایا جائے کہ اب تک کتنے لوگوں کو کن اصولوں کے تحت امداد دی گئی ہے کیونکہ یہ سوال صوبائی حکومتوں اور مرکزی حکومت سے معزز سپریم کورٹ آف پاکستان نے بھی پوچھا تھا۔ وفاقی حکومت ہونے والے اقدامات سے صوبائی اسمبلیوں اور پارلیمنٹ کو اعتماد میں لیں اور ویڈیو لنک کے ذریعے ہونے والے انتظامات اور اقدامات سے اسمبلیوں اور عوام کو آگاہ کریں۔ انہوں نے کہا کہ حکومت کے کردار سے عوام مایوس ہوچکے ہیں اور حکومت حکومتی ذمہ داریاں نبھانے میں ناکام ہوچکا ہے۔ لوگ اپنی مدد آپ کے تحت سرگرمیاں جاری رکھے ہوئے ہیں اور حکومت پوائنٹ سکورنگ میں مصروف ہے جبکہ کوئی عملی اقدامات نظر نہیں آرہے۔

مزید :

پشاورصفحہ آخر -