نیو یارک میں 3000 لوگوں کو بلا ترتیب منتخب کر کے ان کا کورونا وائرس ٹیسٹ کیا گیا، نتیجہ کیا نکلا؟ انتہائی پریشان کن انکشاف منظر عام پر

نیو یارک میں 3000 لوگوں کو بلا ترتیب منتخب کر کے ان کا کورونا وائرس ٹیسٹ کیا ...
نیو یارک میں 3000 لوگوں کو بلا ترتیب منتخب کر کے ان کا کورونا وائرس ٹیسٹ کیا گیا، نتیجہ کیا نکلا؟ انتہائی پریشان کن انکشاف منظر عام پر

  

نیویارک(مانیٹرنگ ڈیسک) امریکہ میں کورونا وائرس کا قدر پھیل چکا ہے، اس حوالے سے ریاست نیویارک کی حکومت نے ایک سروے کروایا ہے جس کے پریشان کن نتائج سامنے آئے ہیں۔ میل آن لائن کے مطابق ریاستی حکومت نے ریاست کی 19کاﺅنٹیوں کے 40ٹاﺅنز میں 3ہزار لوگوں کے اینٹی باڈیز ٹیسٹ کیے، جن میں انکشاف ہوا کہ ہر پانچواں شخص کورونا وائرس میں مبتلا ہے۔ نیویارک شہر میں 21فیصد لوگوں کے ٹیسٹ مثبت آئے۔ لانگ آئی لینڈ میں یہ شرح 16.7فیصد جبکہ اپ سٹیٹ میں 3فیصد رہی۔

سروے کے نتائج کے مطابق 45سے 55سال کی عمر کے لوگوں میں سے 16.7فیصد کورونا وائرس میں مبتلا پائے گئے۔ 25سے 34سال کی عمر کے لوگوں میں یہ شرح 15.9فیصد رہی۔ سیاہ فام ، لاطینی، ایشیائی اور دیگر غیر سفید فام باشندوں میں 22فیصد لوگ کورونا وائرس میں مبتلا پائے گئے۔ریاست نیویارک کی حکومت کا کہنا ہے کہ ان کے یہ اعدادوشمار انتہائی درست ہیں۔

رپورٹ کے مطابق اگر یہ اعدادوشمار درست ہوں تو نیویارک شہر میں کورونا وائرس سے شرح اموات 0.6فیصد سے 0.8فیصد کے درمیان بنتی ہے۔ ریاست میں گزشتہ روز 438نئی اموات ہوئیں جس سے ریاست میں اموات کی مجموعی تعداد 15ہزار 740ہو گئی۔ ریاست میں گزشتہ چوبیس گھنٹوں میں 6ہزار 244نئے مریض سامنے آئے جس سے مریضوں کی مجموعی تعداد 2لاکھ 63ہزار 460تک پہنچ گئی۔

مزید :

بین الاقوامی -کورونا وائرس -