روس کے نائب وزیر دفاع رشوت لینے کے شبے میں گرفتار

روس کے نائب وزیر دفاع رشوت لینے کے شبے میں گرفتار
روس کے نائب وزیر دفاع رشوت لینے کے شبے میں گرفتار

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

ماسکو(ڈیلی پاکستان آن لائن)روس کے نائب وزیر دفاع تیمور ایوانوف کورشوت لینے کے شبے میں گرفتار کرلیا گیا۔

روسی وزارت دفاع کے مطابق تیمور ایوانوف کی جانب سے رشوت لینے کی تحقیقات جاری ہے تاہم روسی حکام نے یہ واضح نہیں کیا کہ نائب وزیر دفاع نے کس سے رشوت لی اور کتنی رقم لی۔روسی حکام کے مطابق گرفتاری کا مطلب یہ ہے کہ تیمور ایوانوف نے کم سے کم 10 لاکھ روبل یعنی تقریباً 30 لاکھ روپے رشوت لی ہے، اس جرم کی زیادہ سے زیادہ سزا 15برس قید ہے۔

48 سالہ تیمور ایوانوف سن 2016 میں صدارتی حکم پر نائب وزیر دفاع مقرر کئے گئے تھے، انہوں نے اس حیثیت میں ملٹری کنسٹرکشن کمپلیکس کی تعمیر کی نگرانی بھی کی تھی۔

فوربز میگزین کے مطابق تیمور سائبرنیٹکس اور نیوکلیئر انڈسٹری سے متعلق امور کے ماہر ہیں اور روس کے سیکیورٹی حکام میں امیر ترین افراد میں سے ایک ہیں۔

وزارت دفاع میں کام کرنے سے پہلے وہ فیول، انرجی کمپنیوں اور ماسکو کی علاقائی حکومت سے وابستہ تھے۔