اسلام آباد میں نان، روٹی کے سرکاری نرخ نامے کیخلاف درخواست ؛ایڈیشنل اٹارنی جنرل، ایڈووکیٹ جنرل اور ڈی سی آفس سے ذمے دار افسر کو کل پیش ہونے کی ہدایت

اسلام آباد میں نان، روٹی کے سرکاری نرخ نامے کیخلاف درخواست ؛ایڈیشنل اٹارنی ...
اسلام آباد میں نان، روٹی کے سرکاری نرخ نامے کیخلاف درخواست ؛ایڈیشنل اٹارنی جنرل، ایڈووکیٹ جنرل اور ڈی سی آفس سے ذمے دار افسر کو کل پیش ہونے کی ہدایت

  IOS Dailypakistan app Android Dailypakistan app

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)اسلام آباد ہائیکورٹ نے وفاقی دارالحکومت میں نان، روٹی کے سرکاری نرخ نامے کیخلاف درخواست پر ایڈیشنل اٹارنی جنرل، ایڈووکیٹ جنرل اور ڈی سی آفس سے ذمے دار افسر کو کل پیش ہونے کی ہدایت کردی ۔

نجی ٹی وی چینل جیو نیوز کے مطابق اسلام آباد میں نان، روٹی کے سرکاری نرخ نامے کیخلاف درخواست پر سماعت ہوئی،جسٹس طارق محمود جہانگیری نے صدر نان بائی ویلفیئر ایسوسی ایشن کی درخواست پر سماعت کی،وکیل درخواست گزار نے کہاکہ 15اپریل کو جاری نوٹیفکیشن میں روٹی کی قیمت 25سے 16 اور نان کی قیمت 30سے 20روپے کی گئی، وکیل عمر اعجاز گیلانی نے کہاکہ پنجاب حکومت نے 14اپریل کو  سستی روٹی سے متعلق نوٹیفکیشن جاری کیا تھا،کنٹرول جنرل نے یہ نوٹیفکیشن پنجاب حکومت کی نقل کرتے ہوئے جاری کیا،پرائس کنٹرول ایکٹ کے تحت نوٹیفکیشن صرف وفاقی حکومت جاری کرسکتی ہے،جسٹس طارق محمود جہانگیری نے استفسار کیا کہ وفاقی حکومت اگر سستی روٹی دینا چاہتی ہے تو اس میں کیا مسئلہ ہے،وکیل درخواستگزار نے کہاکہ یہاں 3ہزار نانبائی ہیں سب یہاں غریب لوگ ہیں،روٹی پر کم از کم 27روپے ، نان پر 30روپے لاگت آتی ہے، نوٹیفکیشن سے اسلام آباد کے 3ہزار تندروں میں کام کرنے ولاے 12ہزار افراد کا روزگار خطرے میں ہے،نوٹیفکیشن کے بعد انتظامیہ نے اسلام آباد میں تندروں کیخلاف کریک ڈاؤن شروع کردیا،وکیل عمر اعجاز گیلانی نے استدعا کی کہ عدالت 15اپریل کا نوٹیفکیشن کالعدم قرار دے،عدالت نے اسلام آباد انتظامیہ، کنٹرولر جنرل پرائس، وفاق پرائس کنٹرول کونسل اور سیکرٹری داخلہ کو نوٹسز جاری کردیئے۔عدالت نے ایڈیشنل اٹارنی جنرل، ایڈووکیٹ جنرل اور ڈی سی آفس سے ذمے دار افسر کو کل پیش ہونے کی ہدایت کردی ۔