ریاست نے عوام کو لینڈمافیاسمیت مختلف مافیازکے رحم وکرم پرچھوڑدیا ،ناصر اقبال

ریاست نے عوام کو لینڈمافیاسمیت مختلف مافیازکے رحم وکرم پرچھوڑدیا ،ناصر ...

لاہور(خبر نگار خصوصی)ہیومن رائٹس موومنٹ کے مرکزی صدرمحمدناصراقبال خان،سیکرٹری جنرل محمدرضاایڈووکیٹ ،سینئر نائب صدور فاروق چوہان ،تنویرخان،آصف چٹھہ ،میاں زاہدلطیف،صدریورپ رانابشارت علی خاں ،صدرمدینہ منورہ سرفرازخان نیازی ،صدرپنجاب یونس ملک،صدر چنیوٹ راناشہزادٹیپو،صدر فیصل آبادندیم مصطفی نے کہا ہے کہ ملک میں متعددطاقتور مافیا زسرگرم ہیں،حکومت بھی ان کے زیراثر ہے ۔ریاست کی رٹ اور گرفت نہ ہونے کے برابر ہے ۔ ریاست نے عوام کو لینڈمافیاسمیت مختلف مافیازکے رحم وکرم پرچھوڑدیا ۔تعلیم اورصحت کے سرکاری اداروں کاکوئی معیار نہیں جبکہ نجی تعلیمی اورطبی ادارے عوام کااستحصال کررہے ہیں۔ ریاست کی طرف سے سرکاری اورنجی اداروں پرکسی قسم کا چیک اینڈبیلنس نہیں۔ وہ ایک اجلا س سے خطاب کررہے تھے۔محمدناصراقبال خان نے مزید کہا کہ انسانی حقوق کی وفاقی اورصوبائی وزارتو ں نے شہریوں کے بنیادی حقوق کی حفاظت کیلئے کبھی کوئی کام نہیں کیا،محض سیمینارزکے انعقاد سے انسانی حقوق کی پامالی بندنہیں ہوگی۔انسانی حقوق سے متعلق موادتعلیمی نصاب میں شامل کیا جائے ۔انہوں نے کہا کہ جعلی ادویات اور منشیات دونوں کیخلاف کریک ڈاؤن کیا جائے۔منشیات کی فروخت سے وابستہ اورانہیں استعمال کرنیوالے عناصرکوروکنا ہوگا۔ انہوں نے کہا کہ قانون سازی کے باوجود چھوٹی عمر کے بچوں کو آزادانہ سگریٹ دستیاب ہیں۔عوامی مقامات پر اور ٹرانسپورٹ میں دھڑلے سے تمباکونوشی کی جاتی ہے ،ا سے روکا جائے ۔انہوں نے کہا کہ منشیات فروش مافیا نوجوانوں کی رگوں میں زہرانڈیل رہاہے ،ریاست روکتی کیوں نہیں۔منشیات کے عادی افراد کی زندگی بچانے کیلئے انہیں دھتکارنا نہیں اپناناہوگا۔انہوں نے کہا کہ ان کی بحالی کیلئے ریاست کی ترجیحات درست نہیں،سرکاری طورپربحالی مراکز بناناہوں گے۔ جس طرح ریاست مجرمانہ سرگرمیوں میں ملوث قیدیوں کو بنیادی ضروریات فراہم کرتی ہے اس طرح منشیات کے عادی افرادکابحالی مراکزمیں زبردستی مگرمفت علاج کیا جائے۔

مزید : میٹروپولیٹن 1