کسی بھی ملک میں معاشیات کی بنیادی حیثیت رکھتی ہے،ڈاکٹر اے آر چوہدری

کسی بھی ملک میں معاشیات کی بنیادی حیثیت رکھتی ہے،ڈاکٹر اے آر چوہدری

لا ہور (انوسٹی گیشن سیل)کسی بھی ملک میں معاشیات کی بنیادی حیثیت رکھتی ہے اور کوئی بھی ملک تب تک ترقی نہیں کر سکتا جب تک اسکا عام آدمی خوشخال نہ ہو ۔حکومت کو ایسے معاشی اور ترقیاقی پر وگرام بنانے چاہیے جسکا براہ راست فائدے عوام کو بھی حاصل ہوسکیں۔ان خیالات کا اظہار انہوں نے NCA&Eکے اکنامک ڈیٹا رٹمنٹ کے سربراہ ڈاکٹر اے آر چوہدری نے کالج میں آنیسلز آف پبلک پالیسی ان کو نٹکسٹ آف کرنٹ سنیریو آف پاکستان کے عنوان پر منعقد ہونے والے سیمنار میں حاضرین سے خطاب کر تے ہوئے کیا۔اس موقع پر سابق چیف ایکونومسٹ ڈاکٹر اقبال خان ،چیف ایگزیکٹو آفیسر وسیم انجم چوہدری،ڈائریکٹر جنرل بینظیر انکم سپورٹ پروگرام سارہ سعید،ڈاکٹر پرویز اور ڈاکٹر خالد رشیدکے علاوہ ورکنگ کیمٹیز کے ممبران امیر علی ،عائشہ حیدر،نازیہ انجم ،مائنہ راؤف ،عاصمہ قیوم ،اکمل یونس اور وہاب نذیر نے شرکت کی ۔اس موقع پر اقبال خان نے کہاکہ کالا باغ ڈیم کی تعمیر سے پاکستان کے معاشی حالات میں کافی بہتری آسکتی ہے۔

اور پاکستان ترقی یافتہ ممالک کی طرح خود سرمایہ کاری کرسکتا ہے۔وسیم انجم نے کہا کہ پاکستان میں سب سے بڑا مسئلہ صاف پانی کی فراہمی کا ہے جس سے آئے روز نت نئی بیماریاں جنم لے رہی ہیں ہمیں سب سے پہلے صاف پانی کی فراہمی کے لئے اقدامات کرنا ہوں گے۔بینظیر انکم سپورٹ پروگرام ڈائریکٹر جنرل ڈاکٹر سارہ سعیدنے کہا کہ جب تک ہم اپنے معاشرے میں خاتون کو مردوں کے برابر اہمیت دیتے ہوئے ترقی کے مواقع فراہم نہیں کریں تب تک ہمار املکی ترقی کی راہ پر گامزن نہیں ہوسکتا۔ بینظیر انکم سپورٹ پروگرام کے تحت آج تک لاکھوں خاندانوں کی مدد کر چکے ہیں تاکہ وہ اپنے پاؤں پر کھڑے ہوکر ملک کی ترقی میں اپنا کردار ادا کرسکیں۔ڈاکٹر خالد رشید نے حاضرین سے گفتگو کرتے ہوئے کہا کہ چائنہ اکنامک کو ریڈور سے ملک معاشی طور پر بہت زیادہ ترقی کر یگا اور پاکستان کے چائنہ سے مزید تعلقات بہتری کی جانب بڑھیں گے۔آخر میں ہر ماہ اس طرح کے سیمنار منعقد کروانے کا عہدکیا گیا ہے تاکہ یہ سوچ وبچار ہو سکے کہ ملکی ترقی میں کیسے کردار ادا کیا جاسکتا ہے۔

مزید : میٹروپولیٹن 4