شارجہ،دو ناراض بھائیوں میں 21سال بعد صلح

شارجہ،دو ناراض بھائیوں میں 21سال بعد صلح

شارجہ(مانیٹرنگ ڈیسک)بڑے بھائی کا درجہ باپ کا ہوتا ہے لیکن سعودی عرب کے اس چھوٹے بھائی نے 21سال تک اپنے بڑے بھائی سے دشمنی پالے رکھی، اس پر قاتلانہ حملہ کیا لیکن اتنے عرصے بعد اسے اپنی غلطی کا احساس ہو گیا اور اس نے بڑے بھائی کے پاؤں چوم لیے۔ سعودی عرب کے ایک اخبار’’صدا‘‘ کی رپورٹ کے مطابق دونوں بھائیوں میں 21سال قبل کسی بات پر جھگڑا ہوا۔ چھوٹے بھائی نے اس دوران ایک مرتبہ ابو ترکی نامی اپنے بڑے بھائی پر حملہ کرکے 6گولیاں اس کے جسم میں داغ دیں لیکن وہ خوش قسمتی سے وہ بچ گیا۔ بالآخر ان کے قبیلے نے ان دونوں کے درمیان صلح کی ٹھانی اور چھوٹے بھائی کو سمجھایا، بات اس کی عقل میں آ گئی اور اس نے قبیلے کے افراد کے ساتھ جا کر بھائی سے صلح کر لی۔ ’’صدا‘‘ نے اپنی ویب سائٹ پر دونوں بھائیوں کی صلح کی ویڈیو بھی اپ لوڈ کی ہے جس میں دیکھا جا سکتا ہے کہ چھوٹا بھائی پہلے ابوترکی کے پیروں پر گر کر انہیں چومتا ہے، پھر اسے گلے لگاتا ہے اور ماتھے پر بوسہ دیتا ہے۔اخبار نے اپنی رپورٹ میں یہ واضح نہیں کیا کہ ان بھائیوں کا سعودی عرب کے کس علاقے سے تعلق تھا اور 21سال قبل ان میں جھگڑا کس بات پر ہوا تھا۔

مزید : علاقائی