بھارتی خاتون کا’جن‘ نکالنے کیلئے اپنے ہی گھر والوں نے غلیظ ترین حرکت پر مجبور کردیا، ایسی خبر کہ پڑھ کر انسان کانپ جائے

بھارتی خاتون کا’جن‘ نکالنے کیلئے اپنے ہی گھر والوں نے غلیظ ترین حرکت پر ...
بھارتی خاتون کا’جن‘ نکالنے کیلئے اپنے ہی گھر والوں نے غلیظ ترین حرکت پر مجبور کردیا، ایسی خبر کہ پڑھ کر انسان کانپ جائے

  


نئی دلی (نیوز ڈیسک) جہالت اور گمراہی جب حد سے گزرجائے تو انسان جانوروں سے بھی بدتر ہوجاتے ہیں۔ بھارتی ریاست جھاڑ کھنڈ کی ایک خاتون کے ساتھ بھی اس کے اپنوں نے ہی ایسا شرمناک سلوک کیا کہ جس کی توقع کسی درندے سے بھی نہیں کی جاسکتی، اور اس بھیانک فعل کی وجہ بھی وہی گمراہی ہے جو آئے روز بھارت میں کسی نئے دلخراش واقعے کا سبب بن رہی ہے۔

37 سالہ سمترا دیوی کو اس کے خاندان والوں نے آسیب زدہ قرار دے کر جانوروں کے گوبر پر بٹھایا اور پھر اس کے جسم سے ڈائن نکالنے کیلئے اسے پیشاب پلاتے رہے۔ سمترا دیوی نے پولیس کو بتایا کہ اتوار کے روز انکی ایک گائے بیمار پڑی تو اس کے خاوند کے دو بھائیوں اور ان کی بیویوں نے اسے جادوٹونے کا مرتکب قرار دے کر جانوروں کے باڑے میں ایک کمرے میں بند کردیا۔ اسے مسلسل گوبر پر بیٹھنے اور پیشاب پینے پر مجبور کیا گیا۔ اس دوران اس کے ظالم رشتہ دار چلاتے رہے کہ اسے زیادہ سے زیادہ پیشاب پلاؤ تاکہ اس کے اندر سے ڈائن نکل جائے۔

مظلوم خاتون کا خاوند دھنیشور رانچی شہر میں کام کرتا ہے۔ اس کا کہنا ہے کہ اگر وہ بروقت نہ پہنچتا تو اس کے بھائی اس کی بیوی کو مار ہی دیتے۔ اس کا یہ بھی کہنا تھا کہ وہ اپنے بھائیوں میں سے سب سے غریب ہے اور کوئی بھی مسئلہ ہو الزام اس پر یا اس کی بیوی پر لگادیا جاتا ہے۔ پولیس نے دھنیشور کے بھائیوں مہیش گانجو اور گنیش گانجو کو گرفتار کرکے قانونی کارروائی کا آغاز کردیا۔

مزید : ڈیلی بائیٹس