انتفاضہ القدس، گذشتہ ہفتے کے دوران6فدائی حملے اور60مقامات پر تصادم ہوا،رپورٹ

انتفاضہ القدس، گذشتہ ہفتے کے دوران6فدائی حملے اور60مقامات پر تصادم ہوا،رپورٹ

غرب اردن/ غزہ (اے این این)گذشتہ ہفتے فلسطین کے مقبوضہ شہروں میں اسرائیلی ریاست کی دہشت گردی کے خلاف جاری فلسطینی انتفاضہ القدس کی کارروائیوں کے دوران 6 فدائی حملے کئے گئے جن میں تین صہیونی زخمی ہوئے۔ فلسطینی میڈیا رپورٹس کے مطابق انتفاضہ القدس کو مانیٹر کرنے والے ویب سائیٹ کی طرف سے جاری کردہ ہفتہ وار رپورٹ میں کہا ہے کہ گذشتہ ہفتے اسرائیلی فوج کے ساتھ فلسطینیوں کے 60 مقامات پر مزاحمتی واقعات رونما ہوئے۔زعترہ چوکی کے قریب ایک فلسطینی شہری کے چاقو حملے میں ایک اسرائیلی فوجی زخمی ہوا جب کہ قابض صہیونی فوج کی جوابی فائرنگ مین ایک سترہ سالہ بچہ قتیبہ یوسف زھران شہید ہوگیا۔رپورٹ کے مطابق گذشتہ ہفتے کے دوران غرب اردن، بیت المقدس اور غزہ کی پٹی کے سرحدی علاقوں میں فلسطینی شہریوں اور اسرائیلی فوج کے درمیان متعدد مقامات پر تصادم ہوا۔غرب اردن کے جنوبی شہر بیت لحم میں الدھیشہ پناہ گزین کیمپ میں فلسطینی نوجوانوں نے اسرائیلی فوج پر پتھرا ؤکیا۔

غرب اردن کے وسطی شہر رام اللہ میں ام صفا کے مقام پر سنگ باری کے نتیجے میں ایک اسرائیلی فوجی زخمی ہوا۔اسرائیلی فوج نے دعوی کیا کہ اس نے گذشتہ ہفتے الخلیل شہر میں تین فدائی حملے ناکام بنائے جب کہ بیت المقدس میں شعفاط کیمپ اور نتانیا کے مقام پر بھی فلسطینیوں کے چاقو سے حملوں کو ناکام بنانے کا دعوی کیا گیا۔اگست کے تیسرے ہفتے کے دوران غرب اردن کے فلسطینی نوجوانوں نے اسرائیلی فوج کو تین بم حملوں سے نشانہ بنایا۔ اسرائیلی فوج نے تسلیم کیا کہ قب راحیل اور عائدہ کیمپ میں اسرائیلی فوج کی گشتی پارٹیوں پر تین بم پھینکے گئے تاہم ان میں کسی قسم کا جانی نقصان نہیں ہوا۔رپورٹ میں بتایا گیا ہے کہ گذشتہ ہفتے اسرائیلی فوج اور فلسطینیوں کے درمیان 60 مقامات پر تصادم ہوا۔ قابض فوج نے فلسطینی مظاہرین کو منتشر کرنے کیلئے ان پر لاٹھی چارج کیا، آنسوگیس کی شیلنگ کی اوردھاتی گولیوں سے انہیں نشانہ بنایا جس کے نتیجے میں کم سے کم 22 فلسطینی زخمی ہوئے۔فلسطینی شہریوں کی طرف سے غرب اردن اوربیت المقدس میں اسرائیلی فوج پر 14 پٹرول بم بھی پھینکے گئے۔اگست کے تیسرے ہفتے کے دوران غرب اردن سے تعلق رکھنے والا ایک 17 سالہ بچہ قتیبہ یوسف زھران اسرائیلی دہشت گردی کی بھینٹ چڑھ کر شہید ہوا۔ اسرائیلی فوج نے شہید زھران کا جسد خاکی قبضے میں لے لیا جس کے بعد اسرائیلی فوج کے قبضے میں موجود شہدا کی تعداد 10 ہوگئی ہے۔رپورٹ کے مطابق گذشتہ ہفتے کے دوران اسرائیلی فوج کی جانب سے فلسطینی شہریوں کے خلاف کریک ڈان کا سلسلہ جاری رہا اور36 بچوں سمیت 95 فلسطینی شہریوں کو حراست میں لے لیا گیا۔

مزید : عالمی منظر