جماعت اسلامی کی انتخابی مہم تیز،ضیاء الدین انصاری گلی محلوں میں پہنچ گئے

جماعت اسلامی کی انتخابی مہم تیز،ضیاء الدین انصاری گلی محلوں میں پہنچ گئے

لاہور (ایجوکیشن رپورٹر) حلقہ این اے 120 جماعت اسلامی کے نامزد امیدوار ضیاء الدین انصاری ایڈووکیٹ نے کہا ہے کہ ٹوٹی سٹرکیں ، گندے بازار اور گلیاں ،تباہ حال سیوریج کا نظام ، سٹریٹ جرائم اور دیگر مسائل نے حلقے این اے 120 کی عوام کو ذہنی مریض بنا دیا ہے ان خیالات کا اظہار گذشتہ روز انہوں نے حلقہ این اے 120 کے علاقے امین پارک میں ڈور ٹو ڈور اور کارنر میٹنگزسے خطاب کرتے ہوئے کیا۔ انہوں نے کہا کہ حلقہ این اے 120مسائل کی آماجگاہ بن چکا ہے جہاں عوام کو چار سالوں میں پینے کا صاف پانی تک مہیا نہیں کیا جا سکا۔حکمران عوامی مسائل سے توجہ دینے کی بجائے میگا پروجیکٹس ان کا حدف ہیں جس کو و ہ ملکی ترقی کا نام دیتے دراصل یہ میگا پروجیکٹس میں ان کے ذاتی مفادات پوشیدہ ہیں۔ انہوں نے کہا کہ ملکی اداروں کی تباہی کا سبب حکمرانوں کے کرپشن اورذاتی مفادات ہیں جس کا خمیازہ عوام بھگت رہے ہیں۔ حکمران جماعت نے عدلیہ اور احتسابی اداروں کے فیصلوں کو مذاق اڑانا کو اپنے وطیرا بنا لیا ہے جو کہ ملکی مفاد کیلئے خطرناک ہے ۔ہمارا مطالبہ ہے کہ شریف خاندان سمیت پانامہ لیکس میں شامل تمام شخصیات کا بالا تفریق احتساب کیا جانا چاہیے تاکہ کرپشن جیسے کینسر کو ملک سے ختم کر کے ملک کو آئین اور قانون کے مطابق ملک کو ترقی کی پٹری پر چڑھا جا سکے۔ اسلامی پاکستان اور خوشحال پاکستان کے راستے میں کرپشن اور کرپٹ مافیا کے لیے کوئی گنجائش نہیں ہے ہم انشاء اللہ عوامی طاقت سے تبدیلی لائیں گے ۔انہوں نے کہا کہ این اے 120میں کرپٹ افراد کا راستہ روکنے کیلئے عوام کو جماعت اسلامی کی قیادت کا ساتھ دینا ہو گا ۔ عوام کو اب سوچ سمجھ کے اپنے ووٹ کا استعمال کرنا ہوگا کیونکہ ووٹ کی طاقت سے ہی معاشرتی تعمیرو ترقی کے ساتھ معاشرے میں تبدیلی لائی جا سکتی ہے ۔ انہوں نے کہا کہ عوام نے موقع دیا تو حلقے کی عوام کو مایوس نہیں کروں اور حلقہ این اے عوام کی پسماندگی اور مسائل کو دور کرنے کے لیے جو کچھ ہو سکا وہ کرونگا اور عوامی مسائل کو ایوان بالا تک پہنچاؤں گا ۔حلقہ این اے 120کی عوام وہ شخص مسائل سے نکال سکتا ہے جو ان کا درد اپنے سینے میں رکھتا ہو اور کامیابی کے

مزید : میٹروپولیٹن 1