چیئرمین بحریہ ٹاؤن اور مےئر وسیم اختر کے کلین کراچی‘ معاہد ہ پر دستخط

چیئرمین بحریہ ٹاؤن اور مےئر وسیم اختر کے کلین کراچی‘ معاہد ہ پر دستخط

کراچی ( پ ر )بحریہ ٹاؤن ایک بار پھر ’’کلین کراچی ‘‘ مہم کو شروع کرنے کے لیے پْر عزم ہے۔ چیئرمین بحریہ ٹاؤن اور مےئر کراچی وسیم اختر کے درمیان’ کلین کراچی‘ معاہدے پردستخط ہو گئے ہیں۔ پاکستان بہتر بنانے کی پالیسی کے مطابق بحریہ ٹاؤن نے رضاکارانہ طور پر کام کیا ہے۔اس موقع پر ملک ریاض حسین نے کہا کہ’’مجھے اللہ تعالٰی نے جو بھی دیا ہے وہ لوگوں کی امانت ہے۔ کراچی کی بہتری کیلئے جو ہو سکا کریں گے۔ بحریہ ٹاؤن کراچی کی رونقیں بحال کرکے شہر کو سنگا پور بنانا چاہتا ہے۔شہر میں جگہ جگہ گندگیوں کے ڈھیر کئی بیماریوں کا سبب ہیں۔کراچی کو بہتر بنانے کے لیے بحریہ ٹاؤن سب سے آگے ہے اور میئر کراچی کی ہر قسم کی معاونت کیلئے پرعزم ہیں،کلین کراچی مہم ہمارے عزم کی عکاسی ہے ۔کراچی ،آبادی اور معیشت کے اعتبار سے ‘پاکستان کا سب سے بڑا شہر ، تجارت ،کاروباری اور صنعتی سرگرمیوں کا مرکز ہے۔روزانہ کی بنیاد پر کراچی میں قریباََ 12000 ٹن گندگی جمع ہوتی ہے جس میں سے صرف 40% گندگی صاف کی جاتی ہے۔اس سے پہلے کہ صورتحال اور بدتر ہوجائے بحریہ ٹاؤن بڑے پیمانے پر کلین کراچی چیلنج پورا کرے گا۔اس سے قبل مارچ میں بحریہ ٹاؤن نے کراچی کے تمام ضلع کو صاف کرنے کے لیے 18 دن کی مہم کا آغاز کیا تھا جس میں ناظم آباد ،کلبرگ ، کریم آباد ،بفر زون ،حیدری فیصل ٹاؤن شامل ہیں ۔اس مہم کے دوران100,000 ٹن سے زیادہ کچرا ٹھا یا گیا تھا ۔یہ مہم تین مراحل میں چلائی گئی تھی پہلے مرحلے میں تمام گندگی کے ڈھیر والے علاقوں کو صاف کیا گیا دوسرے مرحلے میں سڑکوں ،گلیوں کو صاف کیا گیا آخری مرحلے میں سڑکوں کی مرمت کی گئی۔اس طرح تین روزہ مہم اپریل میں نوابشاہ میں چلائی گئی تھی۔ ملک ریاض حسین نے کراچی کی ترقی کیلئے 10ارب روپے مختص کئے ہیں جسے میئر کراچی کسی بھی ترقیاتی پراجیکٹ کیلئے کسی بھی وقت حاصل کر سکتے ہیں۔بحریہ ٹاؤن شہر میں سکولوں اور ہسپتالوں کی بحالی کیلئے بھی مالی اور عملی مدد کیلئے ہر وقت تیار ہے۔ ایک بار پھر اس مہم کو چلانے کے لیے پْر عزم ہیں انہوں نے کہا ’’ہم خود مختار ہیں اور ملک کی خاطر ہر قدم ا ٹھائیں گے۔ہمیشہ اپنے شہر کی مدد کے لیے تیار رہیں گے۔ماضی میں بحریہ ٹاؤن کی کرائسز مینجمنٹ ونگ ،گلشن غازی کے حادثے میں سرکاری عہدیدار کے ساتھ کھڑے ہوئے اور بھر پور مدد کی اور لوگوں کو بچانے میں کامیاب ہوئے ۔لیاقت آباد میں ایک اور واقعہ ہوا جس میں تین منزلہ بلڈنگ تباہ ہو گئی بحریہ ٹاؤن نے بھرپور امداد دی اور دو روزہ مشن کو کامیاب بنایا۔بحریہ ٹاؤن کراچی کی تاریخ کا سب سے بڑا پرائیوٹ رئیل اسٹیٹ منصوبہ ہے ۔ پاکستان میں ماسٹر پلان کمیونٹی کا متعارف بحریہ ٹاؤن صرف طرزِ زندگی بہتر بنا نے کے لیے ہی نہیں بلکہ شہروں کی صفائی کے ساتھ صاف اور صحتمند ماحول کے نئے معیار بھی ترتیب دے رہا ہے۔

مزید : صفحہ آخر