ٹرمپ پالیسی مسترد، امریکہ اسلحہ بیچنے کیلئے بدامنی و دہشتگردی کا کھیل دوبارہ شروع کرنا چاہتا ہے: سراج الحق

ٹرمپ پالیسی مسترد، امریکہ اسلحہ بیچنے کیلئے بدامنی و دہشتگردی کا کھیل ...

لاہور(مانیٹرنگ ڈیسک)امیر جماعت اسلامی سینیٹر سراج الحق نے امریکی صدر کی پاکستان سے متعلق پالیسی کو متعصبانہ قرار دیتے ہوئے اس کی شدید مذمت کی ہے اور کہا ہے پوری قوم امریکی پالیسی کو مسترد کرتی ہے ، پاکستان نے خطے سے بدامنی و دہشتگردی کے خاتمہ کیلئے 65 ہز ار شہداء کا خون پیش کیا، انکی قربانیوں سے ہی پاکستان میں امن قائم ہوا جبکہ امریکہ بدامنی و دہشتگردی کا کھیل دوبارہ شروع کر ناچاہتاہے تاکہ اس کے اسلحہ کے کارخانے چلتے رہیں ، ایک اسلامی و جمہوری اور ایٹمی قوت کے حامل ملک کاوزیراعظم کوئی چور اچکا نہیں بن سکتا،سیاسی قبضہ گروپ آئین سے 62،63نکالنا چاہتا ہے،حقیقی جمہوریت و ملکی استحکام کیلئے عوامی عہدوں ، اسمبلیوں کو بددیانت اور خائن لوگوں سے بچانا ہوگا،سپریم کورٹ پاناما لیکس میں دیگر 436افراد کیخلاف بھی نواز شریف کی طرز پر جے آئی ٹی یا کمیشن بنا کر احتساب کے کٹہرے میں کھڑا کرے اور لوٹی گئی قومی دولت واپس لے،مشرف میں اگر کوئی اخلاقی جرا ت ہے تو وہ پاکستان آ کر عدالتوں کا سامنا کریں ، پہلے خود کو کلیئر کریں اور بعد میں قوم کو مشورہ دیں ،زرداری کو کرپشن کا ساتھ نہ دینے کے موقف پر ڈٹ جانا چاہیے۔جماعت اسلامی نے سینئر قانونی ماہرین پر مشتمل کمیٹی قائم کی ہے جو پاناما کیس ،آف شور کمپنیو ں کے مالکوں اور اربوں کھربوں کے قرضے ہڑپ کرنیوالوں کے احتساب کیلئے سپریم کورٹ سے رجوع کرے گی، ملک سے کرپشن کے ناسور کو جڑسے کاٹنے کیلئے قوم نے اپنی عدالت عظمیٰ پر اعتماد کیا اب سپریم کورٹ کا فرض ہے وہ قوم کے اعتماد پر پورا اترے اور لیٹروں کو احتساب کے شکنجے میں لایا جائے۔گزشتہ روز میڈیا کو بریفنگ دیتے ہوئے انکا مزید کہنا تھا جماعت اسلامی کی کسی فر دیا خاندان نہیں کرپشن سے لڑائی ہے اور ہم ملک سے کرپشن خاتمہ تک یہ جنگ جاری رکھیں گے ۔ آئین سے صادق و امین کی شرط نکالنا مسلمہ بین الاقوامی اصولوں کیخلاف اور کرپشن کا دروازہ کھولنے کے مترادف ہے، باسٹھ تریسٹھ کو آئین نکالنے کی بجائے اسے حکومتی منصب کیساتھ ساتھ سرکاری عہد و ں کیلئے بھی لازمی قرار دیا جائے،چین میں کرپشن کی سزا موت ہے جبکہ ہمارے ہاں کرپشن کی کھڑکی نہیں گیٹ کھولنے کی شرمناک سازش کی جارہی ہے۔ نیب اب تک اپنے فرائض کی ادائیگی میں ناکام رہاہے، نیب کے چیئرمین کی تقرری کا اختیار چیف جسٹس آف پاکستان کی نگرانی میں اسلام آباداور چاروں ہائی کورٹس کے چیف جسٹس صاحبان پر مشتمل کمیٹی کو سونپاجائے ، امریکہ کی طرف سے سید صلاح الدین اور حزب المجاہدین کو دہشتگرد قرار دینا ہماری وزارت خارجہ کی سو فیصد ناکامی ہے۔ پاکستان کے مفادات میں اپنی پالیسیاں بنائی جائیں۔

مزید : صفحہ آخر