سندھ کا نیب کیسز میں ملوث افسروں کو عہدوں سے نہ ہٹانے کا فیصلہ

سندھ کا نیب کیسز میں ملوث افسروں کو عہدوں سے نہ ہٹانے کا فیصلہ

کراچی(اے این این ) سندھ حکومت نے نیب کیسز میں ملوث افسران کو عہدوں سے نہ ہٹاتے ہوئے انہیں برقرار رکھنے کا فیصلہ کیا ہے۔قومی احتساب بیورونے گزشتہ روز سندھ ہائیکورٹ میں نیب کیسز میں ملوث سندھ کے افسران کی رپورٹ پیش کی جس میں بڑے بڑے نام شامل ہیں جب کہ نیب رپورٹ کے مطابق سندھ کے 16 سیاست دانوں پر بھی نیب کیسز چل رہے ہیں۔نیب رپورٹ کے مطابق پولیس، محکمہ تعلیم، زراعت سمیت ایم ڈی واٹر بورڈ پر بھی نیب کیسز چلے رہے ہیں۔ذرائع کے مطابق نیب کے خلاف قانونی جنگ میں سندھ حکومت نے اپنے مقف پر قائم رہنے کا اصولی فیصلہ کیا ہے جس کے تحت صوبے میں کام کرنے والے وہ افسران جن پر نیب میں کیسز چل رہے ہیں انہیں عہدوں سے نہیں ہٹایا جائے گا۔ذرائع کا کہنا ہیکہ اس حوالے سے سندھ حکومت کا مقف ہے کہ نیب کو صوبائی محکموں میں کارروائی کا کوئی اختیار نہیں ہے۔ذرائع کے مطابق سندھ حکومت کی جانب سے اہم عہدوں پر تعینات افسران کو برقرار رکھنے کا فیصلہ نیب کو واضح پیغام ہے۔واضح رہیکہ سندھ حکومت نیصوبے میں نیب کے خاتمے کے لیے اسمبلی میں بل پیش کیا تھا جس کے تحت صوبے سے نیب آرڈیننس 1999 کا اطلاق ختم کردیا گیا تھا تاہم اپوزیشن نے بل کو سندھ ہائیکورٹ میں چیلنج کررکھا ہے جس میں عدالت نے نیب کو صوبے میں کارروائیاں جاری رکھنے کا حکم دیا ہے۔

سندھ؍نیب

مزید : علاقائی