باچا خان ایئر پورٹ کے توسیعی منصوبے کے تعمیراتی کام میں سست روی ،مہتاب احمد خان کا برہمی کا اظہار

باچا خان ایئر پورٹ کے توسیعی منصوبے کے تعمیراتی کام میں سست روی ،مہتاب احمد ...

پشاور( سٹاف رپورٹر)وزیراعظم کے مشیر برائے ہوابازی سردار مہتاب احمدخان نے باچا خان انٹرنیشنل ائرپورٹ پشاور کے توسیعی منصوبہ کے تعمیراتی کام میں سست روی پر برہمی کااظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ ٹائم فریم کے مطابق پراجیکٹ کی تکمیل اور تعمیراتی کام کے اعلی معیارپر کوئی سمجھوتہ نہیں کیا جائے گا۔ ان خیالات کا اظہار انہوں پشاور ائرپورٹ کی توسیع اور تجدید کے منصوبہ کے معائنہ کے دوران کیا۔ اس موقع پر سیکرٹری شہری ہوابازی عرفان الہی، ڈی جی عاصم سلیمان اور دیگر متعلقہ حکام بھی موجود تھے۔ مشیرہوابازی کو منصوبہ کے بارے میں تفصیلی بریفنگ دی گئی ۔وزیراعظم کے مشیرسردار مہتاب احمد خان نے کہا کہ پشاور نہ صرف خیبرپختونخوا اور اس سے ملحقہ قبائلی علاقہ جات کا مرکز ہے بلکہ اسے پورے خطہ میں مرکزی حیثیت حاصل ہے اوراقتصادی راہداری کی تکمیل اور آنے والے دنوں میں اس کی اہمیت میں مزید اضافہ ہوگا تاہم اس لئے ضروری ہے کہ یہاں کے باسیوں اور یہاں آمد ورفت رکھنے والوں کو ہوائی سفر کی بہترین سہولیات مہیا ہوں۔ انہوں نے کہا کہ پشاور کے باچا خان ائرپورٹ کی توسیع اور جدید سہولیات کی فراہمی کا منصوبہ اس سلسلے کی اہم کڑی ہے، ایئرپورٹ پر عالمی معیار کی جدید سہولیات کی فراہمی اور توسیع کا یہ منصوبہ 3 ارب روپے کی لاگت سے نومبر تک مکمل ہوگا تاہم منصوبہ کی بروقت تکمیل اور تعمیراتی کام کے معیار پر سمجھوتہ برداشت نہیں کیا جائے گااور مسافروں کو بہترین معیار کی سہولیات کی فراہمی کو ہر صورت یقینی بنایا جائے۔ سردار مہتاب احمدخان نے کہا کہ اس پراجیکٹ میں ڈیڑھ ارب روپے کی لاگت سے کثیرالمنزلہ کارپارکنگ کی تعمیر 9ماہ میں مکمل ہوگی جس میں 900 گاڑیوں کی گنجائش ہوگی،دومسافربورڈنگ بریج بھی تعمیرکئے جارہے ہیں، جدید سہولیات سے لیس ائرپورٹ کا نیا ڈومیسٹک لاؤنج ستمبر میں مکمل ہوجائے گا جس میں بیک وقت 350 مسافروں کی گنجائش ہوگی جبکہ اٹرنیشنل لاؤنج میں بیک وقت 1ہزار مسافروں کی گنجائش ہوگی مشیرہوابازی نے تعمیراتی کام کا معائنہ کیا اور ایئرپورٹ پر صفائی کی ناقص صورت حال کا سخت نوٹس لیتے ہوئے متعلقہ حکام کو کہا کہ تعمیراتی کام کی وجہ سے مسافروں کو مشکلات اپنی جگہ تاہم اس کے باوجود اس امر کو یقینی بنایا جائے کہ صفائی سمیت تمام مسافروں کی دیگر مشکلات ترجیحی بنیادوں ختم کئے جائیں۔

مزید : پشاورصفحہ آخر