امریکی صدر نے پاکستان کی قربانیوں کو نظرانداز کیا، قومی سلامتی کمیٹی نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں ٹرمپ کے الزامات کو مسترد کر دیا

امریکی صدر نے پاکستان کی قربانیوں کو نظرانداز کیا، قومی سلامتی کمیٹی نے ...
امریکی صدر نے پاکستان کی قربانیوں کو نظرانداز کیا، قومی سلامتی کمیٹی نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں ٹرمپ کے الزامات کو مسترد کر دیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ڈیلی پاکستان آن لائن)قومی سلامتی کمیٹی نے دہشتگردی کیخلاف جنگ میں امریکی صدر کے الزامات کو مسترد کر دیا، اجلاس میں کہا گیا ہے کہ دہشتگردی کیخلاف جنگ میں پاکستان کی قربانیوں کو نظرانداز کیا گیا ہے ، قومی سلامتی کمیٹی کا اجلاس وزیراعظم شاہد خاقان عباسی کی زیر صدارت ہوا جس میں چیئرمین جوائنٹ چیفس آف سٹاف کمیٹی، تینوں مسلح افواج کے سربراہوں، سیکرٹری خارجہ اور مشیر قومی سلامتی، آئی ایس آئی، ایم آئی اورآئی بی کے ڈی جیزاور وفاقی وزراءنے شرکت کی ،نجی ٹی وی دنیا نیوز کے مطابق اجلا س کے دوران وزیراعظم شاہد خاقان عباسی نے سعودی قیادت سے ملاقات پرشرکاکواعتماد میں لیااور کہاکہ سعودی قیادت نے دہشتگردی کیخلاف پاکستان کی قربانیوں کو سراہا۔

وزیر خارجہ خواجہ آصف نے ڈونلڈ ٹرمپ کے پالیسی بیان پر بریفنگ دیتے ہوئے کہا کہ امریکی صدرنے پاکستان کی قربانیوں کونظراندازکیا،دہشتگردی کےخلاف جنگ میں 5ہزارسیکیورٹی اہلکارشہید ہوئے،خواجہ آصف نے کہا دورہ امریکا میں ٹرمپ کے بیان کا معاملہ اٹھایا جائےگا۔اجلاس میں ڈی جی ایم آئی نے ملک میں سیکیورٹی صورتحال اور امن و امان پر بریفنگ دی جبکہ سیکرٹری خارجہ تہمینہ جنجوعہ نے اپنے دورہ چین کے حوالے سے شرکا کو آگاہ کیا۔

اجلاس میں امریکی صدر کے پاکستان سے متعلق بیان کاجائزہ لیا گیا اور امریکا کی نئی افغان پالیسی کے بعد کی صورتحال پر بھی غور کیا گیا۔ اجلاس میں امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے پاکستان مخالف بیان کے بعد دوست ممالک کو اعتماد میں لینے کی حکمت عملی پر بھی غورکیا گیا۔

مزید : قومی /اہم خبریں