سکیورٹی اداروں نے لال مسجد وجامعہ حفصہ سے منسلک 10افراد کو گرفتار کرلیا

سکیورٹی اداروں نے لال مسجد وجامعہ حفصہ سے منسلک 10افراد کو گرفتار کرلیا
سکیورٹی اداروں نے لال مسجد وجامعہ حفصہ سے منسلک 10افراد کو گرفتار کرلیا

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

اسلام آباد (ویب ڈیسک)شہداءفاﺅنڈیشن نے الزام لگایا ہے کہ امریکی صدر کی دھمکی کے بعد ریاستی ادارے لال مسجد و جامعہ حفصہ کے خلاف متحرک ہوگئے ہیں اورگزشتہ چوبیس گھنٹوں کے دوران اسلام آباد،کراچی اور راجن پور میں مسجد و مولانا عبدالعزیز کے خاندان سے منسلک دس افراد کو حراست میں لیا گیا،شہداءفاﺅنڈیشن نےریاستی اداروں کے اقدام کو غیر آئینی و غیرقانونی قرار دیتے ہوئے سپریم کورٹ سے رجوع کرنے کا اعلان کر دیا ۔گزشتہ شب سکیورٹی اداروں نے مولانا محمد یعقوب ،محمد میر حسن ، محمد یوسف،محمد عمران،محمد حمزہ،محمد ہارون،محمد علی،حبیب اللہ،کلیم اللہ اورصفی اللہ کو حراست میں لیا،ریاستی اداروں نے زیرحراست افراد پر کسی بھی قسم کے الزامات کے متعلق تاحال آگاہ نہیں کیا۔مذکورہ زیرحراست افراد میں مولانا محمد یعقوب،محمد یوسف،صفی اللہ،محمد عمران،محمد ہارون،محمد حمزہ اور میر حسن خطیب لال مسجد مولانا عبدالعزیز کے رشتہ دار ہیں۔

مزید : اسلام آباد