ٹرمپ کی پاکستان کو دھمکیاں چار سالہ خارجہ پالیسی کی ناکامی ،ڈالروں کیلئے نہیں ملکی مفاد میں پالیسی بنائی جائے:سینیٹر سراج الحق

ٹرمپ کی پاکستان کو دھمکیاں چار سالہ خارجہ پالیسی کی ناکامی ،ڈالروں کیلئے ...
 ٹرمپ کی پاکستان کو دھمکیاں چار سالہ خارجہ پالیسی کی ناکامی ،ڈالروں کیلئے نہیں ملکی مفاد میں پالیسی بنائی جائے:سینیٹر سراج الحق

  

اسلام آباد(ڈیلی پاکستان آن لائن)امیر جماعت اسلامی پاکستان سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ ٹرمپ کی پاکستان کو دھمکیاں چار سال کی خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے ، ٹرمپ نے مودی کو خوش کرنے کیلئے پاکستان کو دھمکیاں دیں اور اعلان جنگ کیا ، ڈالروں کیلئے  نہیں ملکی مفاد کیلئے پالیسی بنائی جائے، ٹرمپ کی پاکستان کو دھمکیاں سو فیصد خارجہ پالیسی کی ناکامی ہے،ٹرمپ کے بیان پر قومی اسمبلی اور سینیٹ کا اجلاس بلایا جائے،پاکستانی آزاد قوم ہیں نہ کسی سے ڈریں گے نہ جھکیں گے ۔

اسلام آباد میں پریس کانفرنس اور میڈیا کے سوالوں کے جواب دیتے ہوئے سینیٹر سراج الحق کا کہنا تھا کہ نوازشریف کو ہم کہتے تھے کہ ایک مستقل وزیر خارجہ بنایا جائے مگر انہوں نے چار سال میں کسی کو وزیر نہیں بنایا ، امریکہ کا ساتھ دینے کے باوجود امریکہ نے آج مودی کو خوش کرنے کیلئے صلاح الدین اور تحریک آزادی کشمیر کو دہشتگرد قرار دے دیا ہے،ہم دوبارہ امریکہ کی غلامی میں نہیں جانا چاہتے ، امریکہ کی امداد ان کے منہ پر ماری جائے اور وہ پالیسی بنائی جائے جو پاکستان کے مفاد میں ہو، پاکستان کی فوج اور عوام نے دہشتگردی کے خلاف ہزاروں قربانیاں دی ہیں جس کی وجہ سے پاکستان میں امن آیا ہے ، امریکہ پاکستان میں دوبارہ دھماکے کروانا چاہتا ہے ،حکمرانوں کو پاکستان کے مفاد میں پالیسیاں بنانی چاہئیں، خواہ کوئی ناراض ہوتا ہے تو ہو جائے کیونکہ گیدڑ کی سوسالہ زندگی سے شیر کی ایک دن کی زندگی بہتر ہے ۔

سینیٹر سراج الحق نے کہا ہے کہ اگلے سال  23مارچ  کو یوم پاکستان کے موقع پر جماعت اسلامی یوتھ کے  ایک لاکھ 22ہزار منتخب نوجوانوں کو مینار پاکستان میں اکٹھا کریں گے ، قائداعظم کے ویژن کے مطابق اسلامی وخوشحال پاکستان کی بنیاد رکھیں گے ، پاکستان جاگیر دار وں اور جنرلوں کی جاگیرنہیں ہے،  2018 کے جنرل الیکشن میں جماعت اسلامی 50فیصد ٹکٹ نوجوانوں کو دے گی تاکہ اسمبلی میں سوچ اور فکر جوان ہو ،جماعت اسلامی نوجوانوں کے ہاتھ میں قلم ، کتاب اور ان کو والدین کا فرمانبردار بنائے گی ،نوجوانوں کو سیاسی جماعتوں کا ایندھن نہیں پاکستان کو اسلامی فلاحی ریاست بنانے کیلئے استعمال کریں گے ۔ سراج الحق نے کہا کہ جے آئی یوتھ انٹراپارٹی الیکشن کے ذریعے نوجوانوں کو ملک کی ترقی کیلئے آگے لے کر آئے ہیں، نوجوانوں کو سیاسی ایندھن بنانے کے بجائے ان کی اخلاقی اور نظریاتی تربیت کریں گے ، موجودہ نظام میں صرف خان ،نواب اور جاگیر دار کا بیٹا ہی اسمبلی میں آسکتا ہے غریب کیلئے اسمبلی میں کوئی جگہ نہیں ہے ،  پاکستان جاگیر دار وں اور جنرلوں کی جاگیرنہیں ، پاکستان عوام نے بنایا ہے انہوں نے کہا کہ پاکستان کا مستقبل نوجوان ہیں یہ قومی سرمایہ ہے اور نوجوانوں کی شمولیت سے ملک اسلامی وخوشحال پاکستان بنے گا۔ جماعت اسلامی نے نوجوانوں کو بغیر کسی تعصب ، مسلک اور قومیت کے جے آئی یوتھ کے نام سے پلیٹ فارم دیا ہے ۔ ابتدائی مرحلے میں پنجاب کی 4015یونین کونسلوں اور 3596وارڈز میں جے آئی یوتھ کے انٹراپارٹی الیکشن ہورہے ہیں اور 40لاکھ نوجوان ایک لاکھ بائیس ہزار نوجوانوں کومنتخب کریں گے پہلے مرحلے میں نولاکھ 70ہزار نوجوانوں نے ووٹ کا حق استعمال کرتے ہوئے 10ہزار 92امیدواروں کا انتخاب کیاہے ۔ سراج الحق نے کہا کہ یہ جمہوریت کی نرسری ہوگی اور اس سے پاکستان خاندانوں ،جاگیرداروں اور سرمایہ داروں کی سیاست سے آزاد ہوگا،  نوجوان مختلف مسائل کی وجہ سے مایوسی کا شکار ہیں اور ایک رپورٹ کے مطابق 64لاکھ نوجوان نشہ کی بیماری کا شکار ہوچکے ہیں ،جماعت اسلامی نوجوانوں کو کارآمدشہری بنائے گی اور ان کی کیریئر کونسلنگ کرے گی ، منشیات مافیا اور دہشت گردوں سے نوجوانوں کو بچانے کیلئے ان کی تربیت اور نوجوانوں میں مثبت سرگرمیوں کا رواج عام کریں گے یونین کونسل کی سطح پر کھیلوں اور جسمانی صحت کیلئے سرگرمیوں کا آغاز کریں گے ،ان نوجوانوں کا سلسلہ ان ہیروز سے جو ڑیں گے جنہوں نے سائنس اور خدمت میں کارمانہ سرانجام دیا، یونین کونسل کی سطح پر لائبریریوں اور لیبارٹریوں کو آباد کریں گے اور امن کے مستقبل کیلئے ان کو ویژن دیں گے ۔ایک سوال کے جواب میں سینیٹر سراج الحق نے کہا کہ انٹراپارٹی الیکشن اب تک کسی بھی جماعت نے نہیں کرائے پہلے مرحلے میں نوجوانوں میں جماعت اسلامی نے الیکشن کرائے اس کی کامیابی کے بعد خواتین کے اندر بھی انٹراپارٹی الیکشن کئے جائیں گے ۔

مزید : قومی