مقبوضہ کشمیر میں پولیس اہلکار نے بھکاریوں سے پیسے چھیننا شروع کردئیے

مقبوضہ کشمیر میں پولیس اہلکار نے بھکاریوں سے پیسے چھیننا شروع کردئیے
مقبوضہ کشمیر میں پولیس اہلکار نے بھکاریوں سے پیسے چھیننا شروع کردئیے

روزنامہ پاکستان کی اینڈرائیڈ موبائل ایپ ڈاؤن لوڈ کرنے کے لیے یہاں کلک کریں۔

سری نگر(ڈیلی پاکستان آن لائن)مقبوضہ کشمیر میں 7لاکھ سے زائد بھارتی فوج اور دیگر فورسز تعینات ہیں جو بھارت کے ناجائز قبضے کو برقرار رکھنے کے لئے کوشاں ہیں مگربھارتی سرکار گھروں سے دور اپنے فوجیوں اور پولیس اہلکاروں کو سہولیات دینے میں ناکام نظر آتی ہے، کچھ عرصے قبل بی ایس نوجوان تیج بہادر کی ویڈیو سامنے آئی جس نے فوجی افسران کی کرپشن کو بے نقاب کیا تھا مگر اب ایک اور پولیس اہلکار کی ویڈیو سوشل میڈیا پر وائرل ہوگئی ہے جس میں وہ اپنے اخراجات چلانے کے بھکاریوں سے پیسے چھین رہا ہے۔

امریکہ اٖفغانستان میں دہشت گردوں کے ٹھکانوں کو ختم کرنے کے لئے کارروائی کرے: قومی سلامتی کمیٹی

سوشل میڈیا پر وائرل ہونے والی ویڈیو میں بھارتی پولیس اہلکار ایک بھکارن سے پیسے چھین رہا ہے اور اسے اپنے رعب اور دبدبے سے دبانے کی کوشش کر رہا ہے۔پولیس اہلکار خاتون سے پیسے چھیننے کے بعد جائے وقوعہ سے فرار ہوگیا لیکن اس سارے واقعے کو وہاں موجود ایک شہری نے اپنے موبائل فون میں قید کر لیا جس کے بعد سوشل میڈیا صارفین نے اسے شدید تنقید کا نشانہ بنایا ، سوشل میڈیا پر ویڈیو وائرل ہونے کے بعد ایس ایس پی ضلع رام بن موہن لال نے میڈیا پر بیان دیتے ہوئے کہا کہ بھکارن سے پیسے چھیننے والے پولیس اہلکار کو معطل کردیا ہے، ان کا مزید کہنا تھا کہ پولیس اہلکار اس سے پہلے ضلع کشتواڑ میں تعینات تھے مگر اس کی شراب نوشی کی عادت کے باعث اسے رام بن میں ٹرانسفر کردیا گیا تھا اور اس کی چیک بک اور اے ٹی ایم کارڈ بھی پولیس اہلکار کی بیگم کو دے دئیے تاکہ وہ سارے پیسے اپنے پاس رکھے اور اپنے خاوند کو شراب نوشی کے لئے پیسے نہ دے۔ مقامی میڈیا رپورٹس کے مطابق مقبوضہ کشمیر میں پولیس اہلکار عام شہریوں اور بھکاریوں سے پیسے چھینتے ہیں اور پولیس اہلکار کو بچانے کے لئے ایس ایس پی نے من گھڑت کہانی بیان کی ہے۔

ویڈیو دیکھیں : 

مزید : ڈیلی بائیٹس