عرب ممالک میں مشکل کا شکار شہریوں کی مدد کیلئے بھارت نے سب سے بہترین قدم اٹھالیا، ایسا کام کردیا کہ عرب ممالک میں بھارتیوں کی تمام مشکلیں حل ہوگئیں، جان کر آپ بھی حکومت پاکستان سے مطالبہ کریں گے کہ فوری یہی کام کرے

عرب ممالک میں مشکل کا شکار شہریوں کی مدد کیلئے بھارت نے سب سے بہترین قدم ...
عرب ممالک میں مشکل کا شکار شہریوں کی مدد کیلئے بھارت نے سب سے بہترین قدم اٹھالیا، ایسا کام کردیا کہ عرب ممالک میں بھارتیوں کی تمام مشکلیں حل ہوگئیں، جان کر آپ بھی حکومت پاکستان سے مطالبہ کریں گے کہ فوری یہی کام کرے

  

ابوظہبی (مانیٹرنگ ڈیسک) عرب ممالک میں مقیم غیر ملکیوں کو قانونی مسائل کا سامنا پہلے بھی کرنا پڑتا تھا لیکن مشرق وسطٰی کے اقتصادی بحران نے ان کی مشکلات میں کئی گنا اضافہ کر دیا ہے۔ اس صورتحال کے پیش نظر بھارتی حکومت نے اپنے شہریوں کی مدد کے لئے ایسا شاندار کام کرنے کا اعلان کر دیا ہے کہ جان کر دیار غیر میں مقیم پاکستانی شہری بھی دعا کریں گے کہ کاش ان کی حکومت بھی کچھ ایسا سوچ لے۔ 

گلف نیوز کی رپورٹ کے مطابق بھارتی حکومت نے اعلان کیا ہے کہ متحدہ عرب امارات میں قانونی مسائل اور مقدمات کا سامنا کرنے والے ایسے بھارتی شہریوں کے مقدمات کی فیس بھارتی حکومت ادا کرے گی جو خود اس کی استطاعت نہیں رکھتے ۔بھارتی حکومت اس مقصد کیلئے ان تمام مقدمات کا جائزہ لے گی جن میں بھارتی شہری مدد کے درخواست گزار ہوں گے، اور ان کی فیس ادا کرنے کیلئے ’انڈین کمیونٹی ویلفیئر فنڈ‘ کو استعمال کیا جائے گا۔

متحدہ عرب امارات میں بھارتی سفیر نودیپ سنگھ سوری کا کہنا تھا کہ بھارتی شہریوں کے مقدمات کیلئے مالی مدد کی فراہمی کا آغاز یکم ستمبر سے کردیا جائے گا۔ خصوصاً کاروباری کمپنیوں کے بند ہوجانے، ملازمین کو نکالے جانے یا ان کی تنخواہیں ادا نہ ہونے جیسے معاملات میں ضرورتمند بھارتی شہریوں کو مدد فراہم کی جائے گی۔ غیر قانونی و مقررہ معیاد سے زائد قیام کے مقدمات میں جرمانے کی سزا پانے والے ان افراد کے جرمانے بھی ادا کئے جائیں گے جو خود اس کی استطاعت نہیں رکھتے۔معمولی جرائم میں سزا پانے والے بھارتی شہریوں کو جیل اور حراستی مراکز سے آزاد کروانے کیلئے بھی ان کی مالی مدد کی جائے گی، اگر ان کے پاس جرمانہ ادا کرنے کی استطاعت نہ ہو۔ اس بات کو یقینی بنایا جائے گا کہ مالی مدد صرف جائز حقداروں کو ہی فراہم کی جائے۔

واضح رہے کہ ’انڈین کمیونٹی ویلیفیئر فنڈ‘ کا قیام 2009ء میں عمل میں لایا گیا تھا لیکن اب اس کا دائرہ کار وسیع کردیا گیا ہے تاکہ وسائل اور استطاعت سے محروم بھارتی تارکین وطن کی اس فنڈ کے ذریعے ہر ممکن مدد کی جاسکے۔

مزید : بین الاقوامی