پاکستان کا وہ علاقہ جہاں  72 سالہ  تاریخ میں پہلی مرتبہ کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیا جائے گا

پاکستان کا وہ علاقہ جہاں  72 سالہ  تاریخ میں پہلی مرتبہ کشمیریوں سے اظہار ...
پاکستان کا وہ علاقہ جہاں  72 سالہ  تاریخ میں پہلی مرتبہ کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کیا جائے گا

  


عمرکوٹ (سید ریحان شبیر )پاکستان کی "72" سالہ تاریخ میں پہلی بار ہزاروں ہندوؤں اور مختلف اقلیتی برادریاں "31" اگست بروز ہفتہ کو مظلوم کشمیریوں سے بھرپور اظہار یکجہتی کا اظہار کرینگے وزیراعظم پاکستان عمران خان اور وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی اور دیگر وفاقی وزراء اور اقلیتی رہنما اس جلسے عام سے خطاب کرینگے اور بھارتی وزیراعظم مودی کو بھرپور پیغام دیا جائے گا کہ پاکستان میں بسنے والے ہندو اور دیگر اقلیتی مذاہب سے وابستہ لوگ مکمل محفوظ ہے ان ہندوؤں کی جان و مال ملکیت کو حکومت پاکستان اور ریاست کا مکمل تحفظ حاصل ہے "ڈیلی پاکستان آن لائن "کو تحریک انصاف کے رہنما لال چند مالھی نے بتایا کہ اکتیس "31"اگست کو پاکستان کی تاریخ میں پہلی بار ہزاروں کی تعداد میں میں پاکستان بالخصوص سندھ میں بسنے والے ہزاروں ہندو اور مختلف اقلیتی برادریاں مظلوم کشمیریوں کے ساتھ اظہار یکجہتی کرنے جاری ہے اس جلسے عام ہزاروں ہندو مظلوم کشمیریوں سے اظہار یکجہتی کرکے مودی کو پیغام دینگے کہ پاکستان میں بسنے والے ہندوؤں کی ہمدردیاں کشمیریوں کےساتھ ہے وہ دن دور جب بھارتی فوج اور مودی کی ظلم وبربریت کے باوجود کشمیر میں آزادی کا سورج جلد طلوع ہوگا تحریک انصاف کے اس جلسے عام سے ہندوؤں اور اقلیتی برادریوں کا جوش ولولہ دیدنی ہے مقامی ہندوؤں کا کہناہے کہ وہ ایک ہاتھ میں کشمیر اور دوسرے ہاتھ میں پاکستانی پرچم لیکر بھارت اور مودی سرکار اور بین اقوامی دنیا کو پیغام دیا جائے گا ظلم وبربریت کی وحشت اور اندھیری رات ختم ہونے کو ہے تحریک انصاف کے اقلیتی رکن قومی اسمبلی لال چند مالھی نے "نمائندہ ڈیلی پاکستان آن لائن "کو جلسے عام کی تفصیلات بتاتے ہوئے بتایا کہ اس جلسے عام سے وزیراعظم پاکستان عمران خان ،وفاقی وزیر خارجہ مخدوم شاہ محمود قریشی سمیت دیگر وفاقی وزراء خطاب کرینگے جلسے گاہ کےلیے ایک وسیع پنڈال بنایا گیا ہے پنڈال گاہ میں تیس ہزار کرسیاں لگائی جائیگی اس تاریخی جلسے عام کی میڈیا کوریج کےلیے ملکی میڈیا الیکٹرانک پرنٹ میڈیا کےساتھ ساتھ بین الاقوامی میڈیا بھی بھرپور کوریج کرے گی جلسے عام میں سرحدی شہروں عمرکوٹ ،تھرپارکر ،سمیت سندھ بھر میرپورخاص ،سانگھڑ،نواب شاہ ،سکھر،گھوٹکی ، شہدادپور، ٹنڈہ آدم ،ٹنڈہ الہ یار، سمیت کراچی ،حیدرآباد وغیرہ سے بڑی تعداد میں ہندوؤں سمیت عوام کی کثیر تعداد شرکت کریں گی جلسے گاہ کو کشمیر اور پاکستانی پرچم سے سجایا گیا ہے -

مزید : علاقائی /سندھ /عمرکوٹ


loading...