مقبوضہ وادی میں 20 ویں روز بھی زندگی قید، جگہ جگہ احتجاج،قابض بھارتی فوج کی شیلنگ سے دو بچوں کی ماں شہید

مقبوضہ وادی میں 20 ویں روز بھی زندگی قید، جگہ جگہ احتجاج،قابض بھارتی فوج کی ...
مقبوضہ وادی میں 20 ویں روز بھی زندگی قید، جگہ جگہ احتجاج،قابض بھارتی فوج کی شیلنگ سے دو بچوں کی ماں شہید

  


 سرینگر (ڈیلی پاکستان آن لائن)مقبوضہ وادی کشمیر  میں کرفیو کو20 روز ہوگئے، تمام تر پابندیوں کے باوجود کشمیر میں زبردست احتجاج جبکہ سرینگر صورہ میں بھارتی فوج کے خلاف مظاہرہ ہوا، گھر میں شیلنگ سے دو بچوں کی ایک ماں شہید ہوگئی۔

وادی میں بھارتی فوج کے خلاف زبردست مظاہرہ کیا گیا، کشمیری نوجوانوں نے سر پر کفن باندھ لیا،خواتین بھی احتجاج میں شریک ہوئیں،بھارتی فوج کی فائرنگ اور پیلٹ گن سے درجنوں کشمیری زخمی ہوگئے۔ ظالم بھارتی فوج نے گھروں میں محصور لوگوں کو بھی نہ چھوڑا، گھروں میں آنسو گیس فائر کئے جس سے کشمیری خاتون شہید ہوگئی۔شہید خاتون کے شوہر کا کہنا ہے کہ کشمیر میں کچھ بھی نارمل نہیں ہے، یہ ان کا میڈیا ہے وہ کچھ بھی کہہ رہے ہیں، وہ جو ہمارے ارد گرد ہو رہا ہے نہیں دکھا سکتے، وہ یہاں سب نارمل دکھا رہے ہیں لیکن کشمیر میں کچھ بھی معمول پر نہیں، میرے بچے روز مجھ سے پوچھتے ہیں کہ ماما کیوں چلی گئیں،یہ بہت تکلیف دہ ہے، پیلٹ گن سے زخمی کشمیریوں نے ٹھیک ہوتے ہی دوبارہ احتجاج میں شرکت کا اعلان کیا ہے۔ قابض فوج نے ہزاروں کشمیری نوجوانوں کو گھروں سے گرفتار کرلیا۔ مائیں گرفتار بچوں کی خیر خبر جاننے کے لیے بے قرار ہیں۔ حریت رہنما وں نے کشمیریوں کو تمام تر پابندیوں کو توڑنے اور چٹان کی طرح قابض فوج کے سامنے ڈٹ جانے کی اپیل کی ہے۔

مزید : قومی


loading...