کاشتکار طبقہ سالانہ 67 ارب روپے کی کرم کش ادویات استعمال کرتا ہے

   کاشتکار طبقہ سالانہ 67 ارب روپے کی کرم کش ادویات استعمال کرتا ہے

  

اسلام آباد (یواین پی) پاکستان میں کاشتکار طبقہ سالانہ 67 ارب روپے کی کرم کش ادویات استعمال کرتا ہے۔ کرم کش ادویات کے استعمال سے زرعی شعبہ کے پیداواری نقصانات کو کم کیا جا سکتا ہے۔ دوسری جانب کرم کش ادویات کا استعمال ماحولیاتی آلودگی سمیت ماحول دوست کیڑوں کے خاتمہ جیسے مسائل کا سبب بھی بن رہا ہے۔زرعی شعبہ کے ماہرین نے کہا ہے کہ پاکستان میں سالانہ 67 ارب روپے کی کرم کش ادویات کا استعمال کیا جا رہا ہے جن میں سے 88.3 فیصد ادویات کا استعمال صوبہ پنجاب میں کیا جاتا ہے جبکہ سندھ کا حصہ 8.2 فیصد اور خیبر پختونخوا اور بلوچستان مجموعی ادویات کے صرف 2.8 فیصد کے مساوی ادویات کا استعمال کرتے ہیں۔ انہوں نے کہا کہ کرم کش ادویات کے استعمال سے زرعی شعبہ کے پیداواری نقصانات پر قابو پانے میں تو مدد ملتی ہے۔

 لیکن دوسری جانب بعض نقصانات بھی ہو رہے ہیں۔

مزید :

کامرس -