تبدیلی سرکار کا منشور غریب مکا دئیے، خواجہ رضوان عالم

   تبدیلی سرکار کا منشور غریب مکا دئیے، خواجہ رضوان عالم

  

 ملتان(نمائندہ خصوصی)پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب کے سینئر نائب صدر خواجہ رضوان عالم اور ممبر قومی اسمبلی و جنرل سیکرٹری اقلیتی ونگ پیپلزپارٹی جنوبی پنجاب نوید عامر جیوا نے مشترکہ بیان میں کہا ہیکہ دو سال میں ملک کو تباہی کے دہانے پر لے جانے والی اور عوام کی زندگی اجیرن کرنے والی تبدیلی سرکار کے بے شرم وفاقی و صوبائی وزرا دو سالہ کارکردگی پر پھولے نہیں سما رہے اس سے ثابت ہو گیا کہ تبدیلی سرکار کا منشور غربت نہیں بلکہ غریب مکاو ہے ہر طبقہ آج پاکستان(بقیہ نمبر33صفحہ6پر)

 میں مشکلات میں گھرا ہوا ہے کیونکہ موجودہ تبدیلی سرکار نے اپنی پالیسوں کی وجہ سے صنعتکار، تاجر، زمیندار، کسان، مزدور، سرکاری ملازم، پڑھا لکھا نوجوان سمیت تمام طبقات کو اجیرن زندگی گزارنے پر مجبور کر دیا ہے عوام کے مسائل کے حل کیلئے اپوزیشن قائدین آواز بلند کرتے ہیں تو انہیں نام نہاد جھوٹے مقدمات بنا کر نیب گردی کا نشانہ بنایا جا رہا ہے بلاول بھٹو زرداری، آصف علی زرداری، فریال تالپور، سید یوسف رضا گیلانی سمیت اپوزیشن قائدین کے خلاف نیب کیزریعے مقدمات بنانا بھی دراصل زاتی سیاسی انتقام کا پیش خیمہ ہے سینئر پارلیمنٹرین سید خورشید شاہ کو اتنا عرصہ سے پابند سلاسل رکھنا بنیادی انسانی حقوق کے خلاف ہے انہیں فوری رہا کیا جائے   نیب ایک متنازعہ ادارہ ہے جو کہ ایک آمر نے سیاسی انجینئرنگ اور انتقامی کاروائیوں کیلئے قائم کیا سپریم کورٹ کے مشاہدہ اور بین القوامی ادارہ ہیومن رائٹس واچ کی رپورٹ نے نیب کی کارکردگی اور اس کے مقاصد پہ کئی سوالات اٹھائے ہیں تبدیلی سرکار اپنی ناکامیوں کے خلاف میڈیا کو بھی بولنے سے روک رہا ہے اس لئے چینلز بند کئے جا رہے ہیں کئی پروگرامز پر پابندی لگا دی گئی میر شکیل الرحمن کو زیر حراست رکھنا  یہ سب تبدیلی سرکار کے احتساب کے نام پر کئے جانے والے ٹوپی ڈرامہ کو عیاں کرتا ہے اور ثابت ہو گیا کہ وزیراعظم عمران خان نے اپنے منصب کو ملکی مفاد کے بجائے سیاسی انتقام کیلئے استعمال کر رہے ہیں نیازی حکومت کلبھوشن جادھو کو عدل انصاف کا موقع دیتی ہے احسان اللہ احسان جیسے عالمی دہشت گرد کو فرار کرا دیتی ہے لیکن سیاسی مخالفین کو انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے وزیراعظم عمران خان اپنی اور اپنے وزراء  کی کرپشن کا حساب دیں؟ شہزاد اکبر نے جو رقم بیرونی دوروں پر خرچ کی کیا اسکا احتساب ہو گا؟ کیا ظفر مرزا اور تانیہ کے نام ای سی ایل مین ڈالے جائیں گے ان پر لگے الزامات کی تحقیقات ہوں گی یا وہ بھی جہانگیر ترین کی طرح اڑن چھو ہو جائیں گے۔

رضوان عالم

مزید :

ملتان صفحہ آخر -