صوبہ بھر کے تھانوں میں کیمرے خراب ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

  صوبہ بھر کے تھانوں میں کیمرے خراب ذمہ داروں کیخلاف کارروائی کا فیصلہ

  

ملتان (وقائع نگار) آئی جی پنجاب کی مانیٹرنگ ٹیموں کی جانب سے ملتان سمیت  صوبہ بھر کے تھانوں کی انسپکشن کے دوران  "فرنٹ ڈیسک۔ایس ایچ اوز کے (بقیہ نمبر4صفحہ6پر)

کمرے اور حوالات  کے جان بوجھ سی سی ٹی وی کیمرے خراب" رکھنے بارے پیش کردہ رپورٹ میں انکشاف ہوا ہے.جس پر غصے کا ظاہر کیا گیا ہے۔اور  آئندہ محتاط رہنے  اور کیمرے خراب ہونے پر روزنامچہ میں رپٹ کرنے کی ہدایت کی گئی ہے۔حکم عدولی کی صورت میں متعلقہ ملزم کے خلاف  سخت محکمانہ کاروائی کرنے کا فیصلہ کیا گیا ہے۔ذرائع سے معلوم ہوا ہے حکومت پنجاب نے عوام کو تھانوں میں درپیش مسائل سے چھٹکارہ دلوانے کیلئے فرنٹ ڈیسک کے قیام کو یقنی بنایا۔بلکہ شہریوں و ملازمین اور بند ملزمان  کی نقل و حمل پر کڑی نگاہ رکھنے کیلئے ایس ایچ او کے کمرے۔فرنٹ ڈیسک اور حوالات میں سی سی ٹی وی کیمرہ نصب کیئے۔تاکہ ان کی آن لائن مانیٹرنگ کی جاسکے۔مگر آئی جی پنجاب کے مانیٹرنگ ٹیم نے جب  ملتان سمیت صوبہ بھر کے تھانوں میں دورہ کیا۔تو معلوم ہوا کہ وہاں  نصب سی سی ٹی وی نصب کیمروں کو جان بوجھ کر خراب رکھا جاتا ہے۔تاکہ من مانیاں کی جاسکے۔ اس تمام صورت حال کے بارے  آئی جی پنجاب کی مانیٹرنگ ٹیم نے اپنی رپورٹ میں انکشاف کیا ہے۔رپورٹ میں یہ کہا گیا ہے کہ فرنٹ ڈیسک انچارجز سے جب وجہ پوچھی جاتی ہے۔تب وہ لاعملی کا ذکر کرتے ہیں۔جس پر آئی جی پنجاب نے اپنی ناراضگی کو ظاہر کیا ہے۔اور صوبہ بھر کے ضلعی و ریجنل پولیس افسران کو ہدایت نامی جاری کیا۔ جس کی روشنی میں ملتان کے ایس ایس پی آپریشنز نے ضلع بھر کے ایس ایچ اوز اور انچارج فرنٹ ڈیسک کو ہدایت کی ہے کہ وہ اپنے متعلقہ تھانے میں فرنٹ ڈیسک۔حوالات اور ایس ایچ اوز کے کمرے کے کیمروں کو کو فنکشنل رکھیں۔جن کو شفٹ وائز چیک کیا جائے۔ خرابی ہونے کی صورت میں فوری طور روزنامچہ میں رپٹ تحریر ہو اور سی پی او کی متعلقہ برانچ کو آگاہ کیا جائے۔مذکورہ احکامات پر عمل نا کرنے کی صورت میں ذمے دار ملازم کے خلاف سخت محکمانہ کاروائی کی جائے گی۔

فیصلہ

مزید :

ملتان صفحہ آخر -