کرائسٹ چرچ مساجد حملے کے مقدمے کی حتمی سماعت آج شروع ہوگی

کرائسٹ چرچ مساجد حملے کے مقدمے کی حتمی سماعت آج شروع ہوگی

  

کرائسٹ چرچ (این این آئی) نیوزی لینڈ کے شہر کرائسٹ چرچ کی مساجد پر حملہ کر نے والے ملزم برنٹن ٹیرنٹ کیخلاف مقدمے کی حتمی سماعت (آج)پیر کو کرائسٹ چرچ کی عدالت میں شروع ہوگی، کیس کی سماعت جج کیمرون مینڈر کرینگے، جمعرات کو مقدمے اختتام پر ملزم برنٹن ٹیرنٹ کو سزا سنائی جائیگی جبکہ ملزم کو سخت سکیورٹی میں ہیلی کاپٹر کے ذریعے کرائسٹ چرچ پہنچا دیا گیا ہے،سماعت سے ایک روز قبل ہی مسجد النور اور لنوڈ مسجد سمیت کرائسٹ چرچ او نیوزی لینڈ کے تمام بڑی شہروں اور اہم مقامات پر سکیورٹی ہائی الرٹ کر کے پولیس کے دستے تعینات کر دیئے گئے، نیوزی لینڈ پولیس نے جمعہ سے ہی مسجد النور اور لنوڈ مسجد کو اپنے گھیرے میں لے رکھا ہے۔تفصیلات کے مطابق گزشتہ سال پندرہ مارچ کو جمعہ کے اجتماع پر فائرنگ کر کے مسجد النور اور لنوڈ مسجد میں 51 مسلمانوں کو شہید اور چالیس کو شدید زخمی کر نے والے ملزم برنٹن ٹیرنٹ کیخلاف مقدمے کی حتمی سماعت (آج) پیر کو کرائسٹ چرچ کی عدالت میں ہوگی جو روزانہ کی بنیاد پر ہوگی اور جمعرات کو ملزم کو سزا سنائی جائیگی۔مقدمے کی سماعت کرائسٹ چر چ ہائی کورٹ کے جج جسٹس کیمرون مینڈر کرینگے،سماعت کے دور ان شہداء کے لواحقین اور زخمی ہونے والے افراد بھی موجود ہونگے جبکہ سماعت میں شامل ہونے والے افراد صبح سات بجے عدالت پہنچیں گے اور عدالتی کارروائی دس بجے شروع ہوگی اور سماعت کے آغاز جج واقعہ سے متعلق پولیس کی انوسٹی گیشن رپورٹ پڑھ کر سنائیں گے۔

کرائسٹ چرچ حملے

مزید :

صفحہ اول -