”یہ معاملہ زیادہ دیر تک نہیں چل سکتا اور اگر۔۔۔“ شعیب اختر بھی پھٹ پڑے

”یہ معاملہ زیادہ دیر تک نہیں چل سکتا اور اگر۔۔۔“ شعیب اختر بھی پھٹ پڑے
”یہ معاملہ زیادہ دیر تک نہیں چل سکتا اور اگر۔۔۔“ شعیب اختر بھی پھٹ پڑے

  

لاہور (ڈیلی پاکستان آن لائن) پاکستان کرکٹ ٹیم کے مایہ ناز سابق فاسٹ باؤلر شعیب اختر نے ساؤتھمپٹن ٹیسٹ میں پاکستانی ٹیم کی کارکردگی پر مایوسی کا اظہار کرتے ہوئے کہا ہے کہ گرین شرٹس میچ میں کہیں بھی فائٹ بیک کرتی نظر نہیں آئی، ٹیم کا ڈرا ہوا مائنڈ سیٹ زیادہ دیر تک نہیں چل سکتا۔ 

تفصیلات کے مطابق اپنے ایک انٹرویو میں ماضی کے عظیم فاسٹ باﺅلر کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم کا ڈرا ہوا مائنڈ سیٹ اب زیادہ دیر تک چل نہیں سکتا، پاکستان میں تو شائقین پہلے ہی کرکٹ دیکھنا چھوڑ گئے ہیں،اگر پاکستانی ٹیم اسی طرح کھیلتی اور باﺅلنگ کرتی رہی تو مستقبل میں بھی اسی طرح کے مسائل رہیں گی۔

شعیب اختر نے کہا کہ میں 140 کلومیٹر فی گھنٹہ کی رفتار سے باﺅلنگ کرنے والے کھلاڑیوں عبدالرزاق، اظہر محمود اور عاقب جاوید کے ساتھ کھیلا ہوں۔ یہ بولرز مڈل میں آ کر ٹیم کو آﺅٹ کر کے دیتے تھے۔ جوفرا آرچر سمیت دوسرے انگلش باﺅلرز نے باﺅنسرز سمیت ہر طرح کی ورائٹی استعمال کی، مجھے سمجھ نہیں آتا کہ ہمارے باﺅلرز کو کیا سکھایا جا رہا ہے۔

انہوں نے کہا کہ پاکستان کے سب باﺅلرز ایک ہی طرح کی بولنگ کرتے جا رہے ہیں، مینجمنٹ پلیئرز کو کیا سمجھا کر بھیج رہے ہیں کہ کرنا کیا ہے، باﺅلرز کے اندر جارحانہ پن کا انجکشن نہیں لگایا گیا، کھلاڑیوں کو بتانا پڑے گا کہ کیسے باﺅلنگ اور بیٹنگ کرنی ہے۔ 

شعیب اختر کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم کی طرف سے اب تک بڑی مایوس کن کارکردگی کا مظاہرہ کیا گیا ہے اور مجھے کہیں نہیں لگا کہ پاکستانی ٹیم انگلینڈ ٹیسٹ سیریز جیتنے گئی ہے، دوسرے ٹیسٹ میں تو بیٹنگ، باﺅلنگ، کپتانی اور مینجمنٹ سب کی کارکردگی بڑی مایوس کن رہی ہے۔

مزید :

کھیل -