سندھ اسمبلی کا اجلاس شور شرابے کی نذر ،اپوزیشن اراکین نشستوں پر کھڑے ہوگئے

سندھ اسمبلی کا اجلاس شور شرابے کی نذر ،اپوزیشن اراکین نشستوں پر کھڑے ہوگئے
سندھ اسمبلی کا اجلاس شور شرابے کی نذر ،اپوزیشن اراکین نشستوں پر کھڑے ہوگئے

  

کراچی(ڈیلی پاکستان آن لائن)سندھ اسمبلی کے پیر کو ہونے والے اجلاس کا آغاز شور شرابے سے ہوا،اپوزیشن کے متعدد ارکان اپنی نشستوں سے اٹھ کر کھڑے ہوگئے،قائم مقام سپیکر نے اپوزیشن ارکان کو بولنے کی اجازت نہیں دی۔

جی ڈی اے رکن نند کمار نکتہ اعتراض پر بولنا چاہتے تھے۔ان کا کہنا تھا کہ جی ڈی اے کے پاس سندھ اسمبلی میں کوئی چیمبر نہیں ہے۔ وزیر پارلیمانی امورمکیش کمار چاولہ نے کہا کہ جی ڈی اے کے علاوہ تمام پارلیمانی جماعتوں کو چیمبر ملا ہوا ہے۔وزیر پارلیمانی امور نے جی ڈی اے ارکان کو چیمبر کی فراہمی کی یقین دہانی کرائی تاہم جی ڈی اے رکن سپیکر ڈائس کے سامنے آگئے اور انہوں نے شور شرابہ کیا جس پر ریحانہ لغاری نے کہا کہ مجھ سے اس طرح بات نہ کریں۔ قائم مقام سپیکر نے شور کے دوران ہی وقفہ سولات شروع کرنے کی رولنگ دی۔جی ڈی اے کے احتجاج کے دوران  اپوزیشن جماعتوں کے ارکان قائم مقام سپیکر کے ڈائس کے سامنے جمع ہوکر شور شرابا کرتے رہے، وہ نئے ساتویں ضلع کیماڑی  کے اعلان پر احتجاج کررہے تھے۔

مزید :

علاقائی -سندھ -کراچی -