دہشت گردی کے خلاف سب کو متحد ہونا پڑے گا :زرداری

دہشت گردی کے خلاف سب کو متحد ہونا پڑے گا :زرداری
دہشت گردی کے خلاف سب کو متحد ہونا پڑے گا :زرداری

  

کراچی (مانیٹرنگ ڈیسک)صدر آصف علی زرداری نے کہا ہے کہ دہشت گردی اور انتہا پسندی بڑے چیلنجز ہیں جن سے نمٹنے کیلئے سیاسی جماعتوں اور عوام کو کردار ادا کرنا ہوگا۔ بلاول ہاو¿س میں صدر زررداری کی زیر صدارت امن وامان پر اعلیٰ سطحی کا اجلاس ہواجس میں حالیہ ٹارگٹ کلنگ ،جناح ہسپتال میں گھس کر فائرنگ کرکے ایک شخص کو قتل کیے جانے اور پولیو ٹیم پر حملے میں ملوث ملزمان کی عدم گرفتاری پر صدر نے پولیس پر سخت برہمی کا اظہار کیا اور ہدایت کی کہ قانون نافذ کرنے والے ادارے عوام کے جان ومال کے تحفظ کو یقینی بنائیں اور جرائم پیشہ عناصر کے خلاف بلاتفریق کارروائی کی جائے۔ اجلاس میں صدر کو صوبے میں نئی اسلحہ پالیسی بنانے پربریفنگ دی گئی۔ اجلاس میں فیصلہ کیا گیا کہ کراچی و صوبے کے داخلی خارجی راستوں پرکمپیوٹرائیزڈ چیک پوسٹیں اور سی سی ٹی وی کیمرے نصب کیے جائیں گے جس سے آنے جانے والے لوگوں کی آمدو رفت کو مانیٹر کیا جائے گا اور حساس مقاما ت پر رینجرز اور پولیس کی چیک پوسٹیں قائم کی جائیں گی۔ پولیس کو پانچ ہزار بلٹ بروف جیکٹس اور سو سے زائد بکتر بند گاڑیاں دی جائیں گی۔ بم ڈسپوزل سکواڈ کو خصوصی تربیت اور حساس آلات فراہم کیے جائیں گے اور صوبے بھر میں کمیونٹی پولیسنگ کا دائرہ وسیع کیا جائیگا۔ اجلاس میں وزیراعلیٰ سندھ سید قائم علی شاہ، صوبائی وزرائ، محکمہ داخلہ ، پولیس اور رینجرز سمیت دیگر قانون نافذ کرنے والے اداروں کے حکام نے شرکت کی ۔

مزید : قومی