کاشتکاری کی منظم حکمت عملی سے بھر پور پیداوار حاصل کی جا سکتی ہے‘محمد عارف شیخ

کاشتکاری کی منظم حکمت عملی سے بھر پور پیداوار حاصل کی جا سکتی ہے‘محمد عارف ...

بہاولنگر(این این آئی)کاشتکاری کی منظم حکمت عملی سے بھر پور پیداوار حاصل کی جا سکتی ہے ۔گندم کے کاشتکار بہتر نگہداشت کے لئے جڑی بوٹیوں کا بروقت خاتمہ کریں ،زرعی ادویات میں فی ایکڑ سو سے ایک سو بیس لٹر پانی ملاکر اسپرے کیا جائے ۔زرعی تر قی سے ہی ملکی معیشت کو مستحکم کیا جا سکتا ہے۔ملک کو زرعی اجناس میں خود کفیل کر کے ملکی معیشت میں انقلاب بر پا کیا جا سکتا ہے ۔ان خیالات کا اظہار پاکستان کراپ پروٹیکشن ایسوسی ایشن کے ریجنل کو آرڈینیٹر وچیف ایگز یکٹو کراپ لینڈ گروپ محمد عارف شیخ نے بہاولنگر دورہ میں میڈیا نمائند گان سے خصوصی گفتگو کرتے ہوئے کیا ۔انہوں نے کہا کہ زرعی تر قی سے ہی ملکی معیشت کو مستحکم کیا جا سکتا ہے۔ملک کو زرعی اجناس میں خود کفیل کر کے ملکی معیشت میں انقلاب بر پا کیا جا سکتا ہے۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ کاشتکار حضرات گندم کی فصل کی بہتر نگہداشت کے لئے کھیتوں میں موجود جڑی بوٹیوں کا بروقت خاتمہ کر یں کیونکہ جڑی بوٹیوں کی وجہ سے پیداوار میں کمی واقع ہو تی ہے جبکہ زرعی ادویات کے سپرے کے محلول میں فی ایکڑ ایک سو سے ایک سو بیس لٹر پانی کا استعمال کیا جائے تا کہ فصل کو پیداواری نقصان سے بچنا ممکن ہو سکے ۔محمد عارف شیخ نے مزید بتایا کہ فوڈسیکورٹی کے حوالہ سے گندم کی فصل انتہائی اہمیت کی حامل ہے جسکی بہتر پیداوار سے نہ صرف غذائی خود کفا لت حاصل کی جا سکتی ہے بلکہ کاشت کاروں کی انفرادی خوشحالی بھی ممکن ہے لہذا گندم کی فصل پوری توجہ کی متقاضی ہے تاکہ کاشتکاروں کو انکی محنت کا صلہ حاصل ہو ۔ اور کاشتکار سپرے کرتے وقت مخصوص نوزل کا استعمال کریں تاکہ موثر اور فائدہ مند نتائج حاصل ہو سکیں ۔

مزید : کامرس