لاہورچیمبرکا دیگرچیمبروں کے ساتھ مل کر کام کرنے کا فیصلہ

لاہورچیمبرکا دیگرچیمبروں کے ساتھ مل کر کام کرنے کا فیصلہ

لاہور (کامرس رپورٹر) لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری نے ملک میں غیر ملکی سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے خطے کے دیگر چیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے ساتھ مربوط روابط قائم کرنے کا فیصلہ کیا ہے ۔ ایک بیان میں لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کے صدر انجینئر سہیل لاشاری نے کہا کہ لاہور چیمبر ا س سلسلے میں ایک جامع حکمت عملی مرتب کرے گا جس کے تحت بین الاقوامی برادری کو پنجاب میں تجارت و سرمایہ کاری کے مواقعوں سے آگاہ کیا جائے گا۔ انہوں نے کہا کہ ملک کے دیگرچیمبرز آف کامرس اینڈ انڈسٹری اور تجارتی تنظیموں کو اس سلسلے میں اعتماد میں لیکر اقدامات اٹھائے جائیں گے۔ اس کے علاوہ خطے کے دیگر ممالک کے ڈپلومیٹس کو لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری میں مدعو کرکے میں پاکستان میں سرمایہ کاری کے مواقعوں پر تبادلہ خیال کیا جائے گا۔ اس کے علاوہ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری خطے کے دیگر ممالک کے چیمبرز میں وفود بھجوائے گا۔ انجینئر سہیل لاشاری نے کہا کہ لاہور چیمبر آف کامرس اینڈ انڈسٹری کا مقصد حکومت کی مدد کرنا ہے جو ملک میں سرمایہ کاری کو فروغ دینے کے لیے انتھک کوششیں کررہی ہے۔انہوں نے کہا کہ پاکستان کو اگلی دو یا تین دہائیوں تک سات فیصد گروتھ ریٹ کی ضرورت ہے تاکہ جی ڈی پی میں اضافہ ہوسکے۔

 انہوں نے کہا کہ پاکستان نوجوان افرادی قوت سے مالامال ہے جو اسے خطے کے دیگر ممالک سے ممتاز کرتی ہے ۔ پاکستان میں غیرملکی سرمایہ کاری کے فروغ سے ان نوجوانوں کو اپنی صلاحیتوں کے اظہار کا موقع ملے گا۔ انہوں نے کہا کہ پاکستان میں غیرملکی سرمایہ کاروں کو بہت سی سہولیات حاصل ہیں، منافع یا سرمائے کی ترسیل پر کوئی پابندی عائد نہیں لہذا لاہور چیمبر اُن پر زور دے گا کہ وہ حکومت کی بہترین سرمایہ کار دوست پالیسیوں سے فائدہ اٹھائیں۔

مزید : کامرس