القاعدہ نے ایک مرتبہ پھر طاقت پکڑلی، اب کس جگہ کو نشانہ بنانے کی تیاری ہے؟ سب سے خطرناک دعویٰ سامنے آگیا

القاعدہ نے ایک مرتبہ پھر طاقت پکڑلی، اب کس جگہ کو نشانہ بنانے کی تیاری ہے؟ سب ...
القاعدہ نے ایک مرتبہ پھر طاقت پکڑلی، اب کس جگہ کو نشانہ بنانے کی تیاری ہے؟ سب سے خطرناک دعویٰ سامنے آگیا

  

لندن(مانیٹرنگ ڈیسک) شدت پسند تنظیم القاعدہ کو کئی سال قبل منتشر کیا جاچکا ہے تاہم اب برطانوی وزیر برائے سکیورٹی بین ویلیس نے اس کے متعلق انتہائی خطرناک دعویٰ کر دیا ہے۔ میل آن لائن کے مطابق بین ویلیس نے کہا ہے کہ القاعدہ ایک بار پھر منظم اور اتنی طاقت ور ہو چکی ہے کہ عالمی سطح پر دہشت گردی کی کارروائیاں کر سکے اور وہ اس کی تیاریاں بھی کر رہی ہے۔ بین ویلیس نے القاعدہ کی منصوبہ بندیوں کے بارے میں انکشاف کرتے ہوئے بتایا کہ ”اس بار وہ مختلف ممالک کے ایئرپورٹس اور پروازوں کو نشانہ بنانے کی تیاری کر رہی ہے۔“

بین ویلیس کے مطابق القاعدہ اب جس قدر خطرناک منصوبہ بندی کر رکھی ہے اس نے وزراءکی نیندیں اڑا رکھی ہیں۔ اس بار وہ خودکش مسافروں اور بارود سے بھرے ڈرون طیاروں کے ذریعے ایئرپورٹس اور ایئرلائنز کو نشانہ بنائیں گے۔ ان کارروائیوں کے ذریعے القاعدہ ایک بار پھر دنیا کی خوفناک ترین شدت پسند تنظیم بننا چاہتی ہے۔انہوں نے کہا کہ ”ہمیں اندر سے بھی خطرہ لاحق ہے کیونکہ ممکنہ طور پر القاعدہ کے شدت پسند خفیہ طور پر مختلف ایئرپورٹس پر کام کر رہے ہیں جو ایئرپورٹس کی سکیورٹی کے لیے بڑا خطرہ ثابت ہو سکتے ہیں۔دہشت گرد ایئرپورٹس پر بم لیجانے کے کئی طریقے ایجاد کر چکے ہیں۔ اگر ہم ان کے لیے سامنے کا دروازہ بند کریں گے تووہ پچھلا دروازہ استعمال کرنے کی کوشش کریں گے۔چنانچہ ہمیں القاعدہ کی اس نئی منصوبہ بندی کو ناکام بنانے کے لیے ایئرپورٹس کی سکیورٹی کو انتہائی سخت بنانا ہو گا۔“

مزید : برطانیہ