نیب احتساب کے بجائے انتقام کا ادارہ‘ ہمارے حوصلے پست نہیں ہوں گے‘ جاوید ہاشمی

  نیب احتساب کے بجائے انتقام کا ادارہ‘ ہمارے حوصلے پست نہیں ہوں گے‘ جاوید ...

  



ملتان (نیوز رپورٹر) مسلم لیگ ن کے سینئر رہنما مخدوم جاوید ہاشمی نے کہا ہے کہ احسن اقبال کی گرفتاری انتقامی کارروائی کی بدترین مثال ھے۔ اب واضح ھو گیا ھے کہ جو بھی عوامی بنیادی حقوق کے لیے آواز اٹھائے گا اسے نیب اٹھا لے گا۔اس طرح کی بدترین انتقامی کارروائیاں تو کسی ڈکٹیٹر کے دور میں بھی نہیں ھوئیں۔ نیب کے چیئرمین کو اسکنڈل کے ذریعے حکومت نے بلیک میل کر رکھا ھے جس سیاسی مخالف کو گرفتار کرانا ھو چئیرمن نیب حکم پورا کرنے پر مجبور ھیں۔ مشرف نے نیب سیاسی جماعتوں کی توڑ (بقیہ نمبر31صفحہ12پر)

پھوڑ کے لئے بنایا تھا اور اب یہ انتقامی کاروائیوں کی نت نئی اشکال سامنے لا رھا ھے۔ حکومت میں بیٹھے ھوئے لوگ نیب کو نظر نہیں آتے اپنے بیان میں انہوں نے کہا کہ اپوزیشن سیاسی جماعتوں کو چاہیے کہ ایک بار چئیرمن نیب سے ملکر وہ لسٹ لے لیں جو کہ حکومت نے اسے دی ھوئی ھے تاکہ اپوزیشن جماعتوں کے رہنما مشترکہ گرفتاری پیش کر سکیں۔ان گرفتاریوں سے اپوزیشن جماعتوں کو نہ تو ڈرایا جا سکتا ہے اور نہ جھکایا جا سکتا ھے بلکہ حکومت کے گھناؤنے چہرے سے نقاب الٹ رھے ھیں۔ انہوں نے کہا کہ نیب احتساب کا ادارہ بننے کے بجائے انتقام کا ادارہ بن چکا ھے۔ حکومت یاد رکھے کہ اگر ڈکٹیٹرز ہمیں انتقامی کارروائیوں سے نہیں ہرا سکا تو مجبور نیب ھمارا کیا بگاڑ سکتا ھے۔ عوام پر مہنگائی اور بے روزگاری کے پہاڑ توڑنے والے عوامی توجہ ھٹانے کے لئے اوچھے ہتھکنڈوں پر اتر آئے ہیں۔ انتقامی کارروائیوں سے عوام اور اپوزیشن کے حوصلے پست نہیں کیے جا سکتے اب وہ وقت آنے والا ھے کہ سیاسی جماعتوں کے کارکنان لائینوں میں لگ کر گرفتاریاں دیں گے اور جیلوں میں جگہ نہیں ھو گی۔حکمران انتقام کی آگ میں اندھے ھو چکے ھیں۔

جاوید ہاشمی

مزید : ملتان صفحہ آخر