کسٹم کی تلف کی جانے والی 3ہزار شراب کی بوتلیں چوری ہونے کا انکشاف

کسٹم کی تلف کی جانے والی 3ہزار شراب کی بوتلیں چوری ہونے کا انکشاف

  



کراچی (نمائندہ خصوصی) پاکستان کسٹم کی جانب سے تلف کی جانے وای  3ہزار غیر ملکی شراب کی بوتلیں چوری ہونے کا انکشاف، اعلیٰ حکام نے کسٹم ڈے کا بھی انتظار نہیں کیا، جلائی جانے والی منشیات میں بھی بڑے پیمانے پرہیرپھیر، کاغذی کارروائی مکمل کرلی گئی۔ تفصیلات کے مطابق چیف کلکٹر کسٹم نے پکڑی جانے والی منشیات کو تلف کرنے کیلئے کسٹم کے بین الاقوامی دن کی بجائے 13 دسمبر کا انتخاب کیا۔ کسٹم کلکٹریٹ ایسٹ اور ویسٹ کی جانب سے ضبط شدہ 98 کروڑ روپے مالیت کے 87کنسائمنٹ کو ٹھکانے لگانے کی فوری منظوری دی۔ جس میں ہیروئن، افیون، کوکین اور آئس سمیت 96کروڑ روپے مالیت کی 715کلو گرام منشیات کو نذرآتش کرنے کھگر پھاٹک کے حکام پر 12 دسمبر کی شام تک پہنچایا گیا۔ جس میں 756ٹن چھالیہ، 621کلو گرام پان مصالحہ، 506کلو گرام گٹکا بھی شامل ہے۔ 24گھنٹے میں عمل درآمد کیلئے کسٹم ہاؤس آفیسر (CHO) کو ٹاسک سونپا گیا، متعلقہ آفیسر نے مبینہ طور پر غیر ذمہ داری کا مظاہرہ کرتے ہوئے دیگر سیکورٹی اسکواڈ تعینات کیا۔ 64ہزار شراب اور بیئر کی بوتلوں کو کنٹینر کے ذریعے گھگر پھاٹک کے اس مقام تک پہنچایا گیا جہاں اگلے روز تقریب تلف منشیات منعقد ہونا تھی، رات میں ہی پرائیویٹ مزدور لگا کر کنٹینرز سے شراب کی تین ہزار سے زائد بوتلیں پرائیویٹ اور سرکاری گاڑیوں میں لاد کر چوری کرلی گئیں۔ سلور کلر کی ہنڈا کار نمبرARN-333 نے گڈاپ کے علاقے میں واقع ایک بااثر شخص کے  ڈیرے پر 5 چکر لگائے جو کہ گھگر پھاٹک اور ڈیرے کے درمیان پانچ مقامات پر لگے سی سی ٹی وی کیمروں میں بھی دیکھی جاسکتی ہے۔ مذکورہ کار ایک کسٹم اہلکار کے زیراستعمال رہی ہے، جو کہ اس رات اسکواڈ کی سربراہی کررہا تھا، باوثوق ذرائع کے مطابق کنٹینرز سے گاڑیوں میں رکھنے والے مزدوروں کو نقد رقم کی بجائے مزدوری شراب کی بوتلوں کی شکل میں دی گئی۔ چوری ہونے والی شراب کی مالیت ڈیڑھ کروڑ روپے سے زائد بتائی جاتی ہے۔ اسکواڈ میں شامل کسٹم اہلکاروں نے اعلیٰ افسران کی آشیرباد پر راتوں رات کاروائی کرڈالی جبکہ 13 دسمبر کو منعقدہ تقریب میں ممبر ایف بی آر جواد اویس آغا، چیف کلکٹر کسٹم ثریا بٹ اور دیگر افسران کو چھالیہ اور شراب کی چوری کے بارے میں آگاہ بھی کیا گیا تاہم کوئی باضابطہ انکوائری نہیں کی گئی۔ 

مزید : راولپنڈی صفحہ آخر


loading...