بنوں،فنکاروں کا مطالبات کی عدم منظوری کی صورت میں مظاہروں کا اعلان

بنوں،فنکاروں کا مطالبات کی عدم منظوری کی صورت میں مظاہروں کا اعلان

  



بنوں (نمائندہ خصوصی)بنوں کے فنکاروں نے مطالبات تسلیم نہ ہونے کی صورت میں صوبے بھر میں احتجاجی مظاہرے کرنے کا اعلان کردیا کئی سال گزرنے کے باوجود حکومت کی جانب سے بنوں کے فنکاروں کوکسی قسم کا معاوضہ نہیں ملا ہے جس طرح دیگر تنظیموں کو فنڈز دئیے جارہے ہیں اسی طرح ہمیں بھی کچھ دیا جائے نیشنل پریس کلب بنوں میں شوقیہ ہنر مندان آرٹس سوسائٹی کے صدر فرید اللہ وزیر نے اپنے عہدیداروں دل محمد خان,کفایت اللہ راج,شاہ قیاز استاد,کاتب استاد,عالمگیر خان,شپ نیاز,سمیع اللہ,جمال الدین,نورمحمد ودیگرکے ہمراہ ہنگامی پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوئے کہاکہ صوبائی حکومت فنکاروں کے ساتھ سوتیلی ماں جیسا سلوک کررہی ہے شروع دن سے لے کر آج تک بنوں کے فنکاروں کو حکومت کی جانب سے کچھ نہیں ملا ہے ہم نے صوبائی حکومت کے ساتھ ساتھ ضلعی انتظامیہ اور دیگر اداروں سے بھی مطالبہ کئے ہیں مگر تاحال کسی قسم کی کوئی شنوائی نہیں ہوئی ہے باقی تنظیموں کو فنڈز دئیے جارہے ہیں لیکن فنکاروں کوامدادی فنڈز نہیں مل رہے ہیں فنکاروں کا اپنا حق ہے فنکار بھی اسی دھرتی کے باشندے ہیں سابقہ وزیر اعلیٰ پرویزخٹک نے فنکاروں کیلئے وظیفہ دینے کا اعلان کیا تھا لیکن اس اعلان میں بھی زیادہ تر فنکار محروم ہیں چندفنکاروں کوامداد دی جارہی ہے باقی امداد سے محروم ہیں اُنہوں نے کہاکہ معاشرے میں فنکار کی اہم حیثیت ہے معاشرے میں بہت کردار فنکار ادا کررہا ہے شائد وہ معاشرے کے دوسرے فرد ادا نہیں کرسکتا ہے اُنہوں نے کہاکہ صوبائی حکومت فنڈز دے کر ہم ثابت کردیں گے کہ ہم معاشرے کی ترقی کیلئے کتنا کردارادا کرسکتے ہیں نوجوان اور نئی نسل کیلئے فنکار اہم پیغام دے رہے ہیں موجود ہ دور میں فنکاروں کی اہم ضرورت ہیں اُنہوں نے کہاکہ عوامی پروگرامات ہم نہیں کرسکتے ہیں پولیس بے جا تنگ کررہی ہے فنکار کو عزت کی نگاہ سے نہیں دیکھا جارہاہے مخصوص جگہ نہ ہونے کی وجہ سے سیکورٹی کا خدشہ ہوتا ہے فنکاروں کی تنخواہیں نہیں ہوتی ہیں اُنہوں نے صوبائی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ اپنے حقوق دئیے جائیں اور فنکاروں کیلئے ایک مخصوص جگہ دی جائے بصورت دیگر احتجاج کرنے پر مجبور ہوجائیں گے,

مزید : پشاورصفحہ آخر


loading...