ضلعی عدلیہ انصاف کی فراہمی کیلئے کوشاں ہے،کلیم ارشد

ضلعی عدلیہ انصاف کی فراہمی کیلئے کوشاں ہے،کلیم ارشد

  



ٹانک(نمائندہ خصوصی)سیشن جج جنوبی وزیرستان کلیم ارشد نے کہا ہے کہ ضلعی عدلیہ شہریوں کو انصاف کی فراہمی کے لئے ترجیحی بنیادوں پر عملی اقدامات اٹھا رہی ہے چیف جسٹس پشاور ہائی کورٹ جسٹس وقار سیٹھ کی ہدایات کی روشنی میں ضم شدہ قبائلی علاقہ جنوبی وزیرستان کی ضلعی عدلیہ میں میرٹ کی بنیاد پر مرد اور خواتین اہلکاروں کی بھرتی عمل میں لائی گئی ہے اور پانچ ماہ کی انتہائی مختصر مدت میں عدالتوں کے قیام کو عمل میں لایا گیا ہے جسمیں مختلف دفاترز بھی شامل ہیں جن میں تمام ممکنہ سہولیات فراہم کی گئیں ہیں تاکہ عدالتی کاروائی بغیر کسی روکاوٹ کے چل سکے اور سائلین کو انصاف کی فراہمی میں پریشانی کا سامنا نہ ہو سیشن جج کا بتانا تھا کہ جنوبی وزیرستان کی ضلعی عدلیہ نے سائلین کی سہولت کے لئے اپنی نوعیت کی پہلی ویب سائیڈ لانچ کر نے میں کامیابی حاصل کر لی ہے جس کے لئے تما م مرا حل کو حتمی شکل دی جا چکی ہے انہوں نے بتایا کہ مذکورہ ویب سائیڈ کے لانچ ہونے سے جنوبی وزیرستان کے شہریوں کومقدمات داخل عدالت کرنے،انکا دفاع کرنے اورشہادت کے قلم بند کرنے سمیت مقدمات کے مختلف مراحل کی تکمیل کے لئے آسان اردو میں مدد و رہنمائی حاصل ہو سکے گی مذکورہ ویب سائیڈ کا باقاعدہ افتتاح پشاور ہائی کورٹ کے چیف جسٹس کریں گے جبکہ اس کے علاوہ سی ایف ایم آئی ایس سسٹم لانچ کرنے کے لئے ٹینڈر جاری کر دئیے گئے ہیں تاکہ اس سسٹم کو جلد ہی لانچ کیا جا سکے مذکورہ سسٹم کے آپریٹ ہونے سے آن لائن مقدمات کے داخل کرنے ان کے مختلف مراحل طے کرنے کے بارے میں عدالت عالیہ پشاور کی اجازت سے جنوبی وزیرستان کے دور دراز علاقوں اور بیرون ملک رہنے والی عوام کو بہم پہنچائی جائیں گی جس سے مقدمات میں غیر ضروری التواء اور عوام اپنے حقوق کے آسان طریقہ کار کے ذریعے خاطر خواہ فوائد حاصل کر سکیں گے انہوں نے مذید بتایا کہ ضلعی عدلیہ جنوبی وزیرستان نے اپنے تمام فیصلہ شدہ اور زیر التواء مقدمات کو کمپیو ٹرائیزکرنے کا کام بہت حد تک مکمل کر لیا ہے۔

مزید : پشاورصفحہ آخر