غزہ کے مسیحیوں کو کرسمس پر اسرائیل جانے کی اجازت مل گئی

غزہ کے مسیحیوں کو کرسمس پر اسرائیل جانے کی اجازت مل گئی

  



تل ابیب(این این آئی)اسرائیل نے کہا ہے کہ فلسطینی علاقے غزہ میں رہنے والے مسیحیوں کو کرسمس کے موقع پر یروشلم اور مغربی کنارے جانے کی اجازت دی جائے گی۔ قبل ازیں یروشلم میں مسیحی رہنماؤں نے غزہ کے عیسائیوں پر عائد سفری پابندیوں کی مذمت کرتے ہوئے اسرائیلی حکام سے ان پابندیوں کو ختم کرنے کی اپیل کی تھی۔ اس کے بعد اسرائیلی حکومت کی طرف سے کرسمس کی چھٹیوں سے صرف دو دن قبل اعلان کیا گیا کہ غزہ کے مسیحیوں کو یروشلم آنے کی اجازت دی جائے گی۔میڈیارپورٹس کے مطابق سن 2007 میں غزہ پر حماس کے کنٹرول کے بعد سے اسرائیل اور مصر نے اس علاقے پر سخت ترین پابندیاں عائد کر رکھی ہیں۔ غزہ میں رہنے والے تمام باشندوں کو علاقے سے باہر جانے کے لیے اجازت نامہ لینا پڑتا ہے۔ ماضی میں مذہبی مقامات کا دورہ کرنے اور اپنے کنبے سے ملاقات کرنے کے لیے اسرائیل اجازت نامے جاری کرتا رہا ہے۔لیکن اس سال یہ بات واضح نہیں تھی کہ کرسمس کی چھٹیوں پر مسیحیوں کو یروشلم اور مغربی کنارے جانے کی اجازت مل پائے گی یا نہیں۔ اس غیریقینی صورت حال کی وجہ سے یروشلم میں مسیحی رہنماؤں نے ناراضی کا اظہار کیا تھا اور ان کا کہنا تھا کہ وہ پابندی کو ختم کرنے کے لیے اسرائیلی حکام سے اپیل کریں گے۔

مزید : علاقائی


loading...