مظاہرے جاری رہے تومیں بھی وزیراعظم کی طرح مستعفی ہو جاؤں گا، عراقی صدر

مظاہرے جاری رہے تومیں بھی وزیراعظم کی طرح مستعفی ہو جاؤں گا، عراقی صدر

  



بغداد(این این آئی)عراق میں عوامی احتجاج کے نتیجے میں وزیراعظم عادل عبدالمہدی کے استعفے کے بعد صدر برہم صالح نے بھی استعفے کا عندیہ دیا ہے۔عراقی حکومت کے ایک سینئرعہدیدار نے کہا ہے کہ عراقی عوام کے ناپسندیدہ امیدوار کو وزارت عظمیٰ کے عہدے پر فائز کرنے پر اصرار جاری رہا تو صدر برہم صالح بھی عہدہ چھوڑ دیں گے۔عرب ٹی وی کے مطابق البناء اتحاد کی قیادت نے قصی السھیل کو وزارت عظمیٰ کا امیدوار نامزد کردیا، ایک عہدیدار نے بتایا کہ صدر برہم صالح بھی عہدے سے سبکدوش ہونے پر غور کرر ہے ہیں۔ اگر سیاسی جماعتوں کی طرف سے کسی ایسے شخص کو وزیراعظم نامزد کیا گیا جسے عوام قبول نہیں کرتے تو صدر صالح عہدہ چھوڑ دیں گے۔ صدر برہم صالح سیاسی جماعتوں سے بار بار کہہ چکے ہیں کہ وہ کسی ایسے شخص کو وزارت عظمیٰ کے لیے سامنے لائیں جس پر عراق میں عوامی سطح پر زیادہ سے زیادہ اتفاق رائے پایا جائے۔

مزید : علاقائی