ایف بی آر حکام کی آئی ایم یاف کو ویڈیو کا نفرنس میں ریونیو،اہم امور پر بریفنگ

      ایف بی آر حکام کی آئی ایم یاف کو ویڈیو کا نفرنس میں ریونیو،اہم امور پر ...

  



اسلام آباد (سٹاف رپورٹر) ایف بی آر نے ریونیو شارٹ فال پر وڈیوکانفرنس میں واشنگٹن میں آئی ایم ایف کے حکام سے معلومات کا تبادلہ کیا۔آئی ایم ایف ایگزیکٹو بورڈ کی جانب سے ایف بی آر حکام کو ریونیوشارٹ فال کو پورا کرنے کے لئے اقدامات کرنے پر زوردیا گیا۔ایف بی آر کے اعلیٰ حکام نے آئی ایم ایف کی ٹیم کو آگاہ کیا کہ اضافی ریونیو اکٹھا کرنے کیلئے  اقدامات کئے گئے ہیں اور ایف بی آر کی طرف سے کی جانے والی کاوشوں کے نتیجے میں رواں مالی سال کے پہلے 5 ماہ کے اقتصادی اعدادوشمار حوصلہ افزا ہیں۔آئی ایم ایف حکام کو بتایا گیا ہے کہ رواں ماہ دسمبر کیلیے مقرر کردہ ٹیکس وصولیوں کا ہدف 508 ارب 45کروڑ10 لاکھ روپے حاصل کرنے کیلئے تمام فیلڈ فارمشنز کو ہدایت کی گئی ہے کہ نہ صرف رواں ماہ کے ہدف کو یقینی بنایا جائے بلکہ پچھلے شارٹ فال میں کمی لانے کیلیے اضافی ریونیو بھی اکٹھاکیا جائے۔ملکی برآمدات میں اضافہ ہوا ہے اور زرمبادلہ کے ذخائر میں اضافے کے ساتھ ساتھ ریونیو گروتھ میں بھی اضافہ ہوا ہے اور توقع ہے کہ رواں مالی سال دسمبر میں ریونیو گروتھ مزید بڑھے گی، ٹیکس نیٹ کو وسعت دینے کیلئے اقدامات کئے جارہے ہیں جبکہ تاجروں کو ٹیکس نیٹ میں لانے سے متعلق معاہدے پر عملدرآمد شروع کردیا گیا ہے، ملک بھر میں تاجر نمائندوں پر مشتمل کمیٹیاں قائم کی جارہی ہیں اور کمیٹیوں کے دائرہ کار پر مشتمل ٹی او آر جاری کردیے گئے ہیں جبکہ ایف اے ٹی ایف کی شرائط دہشتگردوں کی مالی معاونت اور منی لانڈرنگ کی صورت میں دہشتگردی کیخلاف عالمی جنگ  کے حوالے سے پاکستان حکومت ایف بی آر کی پالیسیوں سے آگاہ کیا۔ ایف بی ار نے تمام بینکوں کے ساتھ کئے گیے ڈیٹا شئیرنگ کے معاہدے کے حوالے سے بھی آگاہ کیا ذرائع نے بتایا ہے کہ کہ وزارت خزانہ اور ایف بی آر کی جانب سے ایم ایف حکام کو بتایا گیا ہے کہ آئندہ ماہ سے اگلے مالی سال کیلیے بجٹ کی تیاری کا عمل شروع کردیا جائے گا اور اگلے بجٹ میں بھی غیر ضروری ٹیکس چھوٹ و رعایات ختم کی جائیں گی اور ٹیکس نیٹ بڑھایا جائیگا۔

ریونیو شارٹ فال

مزید : صفحہ اول


loading...