لیگی رہنما جاوید لطیف کی نیب انکوائری کیخلاف ہائیکورٹ میں درخواست دائر 

لیگی رہنما جاوید لطیف کی نیب انکوائری کیخلاف ہائیکورٹ میں درخواست دائر 

  



لاہور(نامہ نگار خصوصی) مسلم لیگ (ن) کے ایم این اے جاوید لطیف کی آمدنی سے زائد اثاثوں کے الزامات میں نیب انکوائری کو لاہور ہائی کورٹ میں چیلنج کر دیا۔عدالت عالیہ کے ڈویژن بنچ نے اس سلسلے میں دائر جاوید لطیف اور ان کے ساتھیوں انور لطیف، اختر لطیف، منور لطیف، امجد لطیف اور احسن جاوید کی درخواست پرچیئرمین نیب، مشترکہ تحقیقاتی ٹیم اور اینٹی کرپشن حکام کو نوٹس جاری کرتے ہوئے نیب کو ہدائت کی ہے کہ ان کے خلاف کسی قسم کی زورزبردستی نہ کی جائے،عدالت نے درخواست گزارون کو بھی ہدائت کی ہے کہ وہ نیب کی تفتیش میں شامل ہو کر اپنا موقف بیان کریں۔درخواست میں کہا گیا ہے،مسلم لیگ ن کا ترجمان ہونے کے باعث جاوید لطیف اور ان کی فیملی کوسیاسی انتقام کا نشانہ بنایا جا رہا ہے، ایم این اے جاوید لطیف سمیت دیگر درخواستگزاروں نے اپنے تمام اثاثے انکم ٹیکس ریٹرن میں ظاہر کر رکھے ہیں، تمام جائیدادوں کا ریکارڈ نیب سمیت دیگر متعلقہ اداروں کے پاس پہلے سے ہی موجود ہے، نیب کی جانب سے جائیدادوں کی خریداری کا ریکارڈ مانگنا جاوید لطیف کے خاندان کی تذلیل کرنے کے مترادف ہے۔نیب نے میاں فلور ملز اور نیو میاں فلور ملز، میاں لطیف پیپر ملز، میاں بلڈرز، 2 عدد اینٹوں کے بھٹے کی سرمایہ کاری کی تفصیلات مانگی ہیں۔ اس کیس کی مزید سماعت27 جنوری میں ہو گی۔

لیگی رہنما

مزید : صفحہ آخر


loading...